اقرار یا انکار وہ بھی آمنے سامنے بیٹھ کر۔۔!! مفتی قوی اور حریم شاہ کے نکاح کی خبریں، دونوں نے ایک دوسرے کی موجودگی میں پاکستانیوں کو اندر کی بات بتا دی

ملتان (نیوز ڈیسک) گزشتہ کچھ عرصے سے سوشل میڈیا پر معروف عالم دین مفتی عبد القوی اور ٹک ٹاک اسٹار حریم شاہ کے نکاح کی خبریں گردش کر رہی ہیں تاہم اب ان خبروں کی حقیقت سامنے آگئی ہے اور دونوں نے ایک دوسرے منہ پر آمنے سامنے بیٹھ کر حقیقت سے پاکستانیوں کو آگاہ کر دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق مفتی عبدالقوی اور ٹک ٹاک اسٹار حریم

شاہ ایک ویب ٹی وی کو انٹرویو دے رہے تھے دونوں کو آمنے سامنے بٹھا کر پروگرام کے میزبان نے پوچھا کہ آپ دونوں کے نکاح کی خبریں سوشل میڈیا کی زینت بنی ہوئی ہیں ان خبروں کے پیچھے کہانی کیا ہے؟جس پر ٹک ٹاک اسٹار حریم شا ہ نے شدید غصے میں کہا کہ” یہ ساری کنفیوژن مفتی عبدالقوی نے پھیلائی ہے، انہوں نے ایک ٹی وی شو میں بیٹھ کر کہا کہ حریم شاہ نے مجھے گلے لگایا ہے، مفتی صاحب ٹی وی پر بیٹھ کر میرے خلاف باتیں کرتے رہتے ہیں، انہوں نے کہا میں نے ان سے نکاح کرلیا، ایک بار کہا کہ انہوں نے مجھے چادر پہنا دی اور ایک جگہ مفتی صاحب نے کہا کہ میں نے ان سے نکاح کے بعد ٹک ٹاک چھوڑ دی”۔ ٹک ٹاک اسٹار کا مزید کہنا تھا کہ ” مفتی صاحب میں قسم کھاتی ہوں کہ مجھے آپ سے ملنے کا کبھی کوئی شوق نہیں رہا اور نہ ہی میں نے آپ سے ملنے کیلئے کسی رابطے کو استعمال کیا، آپ کو میرے خلاف اتنی باتیں نہیں کرنی چاہیے تھیں”۔جواب میں مفتی عبدلقوی کا کہنا تھا کہ” میں وضاحت کردوں میں کوشش کرتا ہوں کہ میری طرف سے کوئی غلط بیانی نہ ہوجائے، میں حلف لے کر کہتا ہوں کہ میں نے کسی شو پر نہیں کہا کہ حریم نے مجھے گلے لگایا”۔ ان کی اس بات پر حریم شاہ نے ٹوکتے ہوئے کہا “اس شو کی ریکارڈنگ موجود ہے آپ کہتے ہیں تو میں آپ کو ابھی دکھا دیتی ہوں، میں آپ کی بیٹی کی عمر کی ہوں، بیٹیوں سے نکاح کیا جاتا ہے؟”۔ جواب میں مفتی عبدالقوی نے کہا کہ “مجھے بالکل اندازہ نہیں کہ اینکر ایسا سوچ رہا ہے،یہ سب باتیں میں نے نہیں اس شو کے اینکر نے کہی ہیں، اینکر کے اپنے ذہن میں یہ بات آئی کہ میں نے جو نکاح کیا ہے وہ کسی اور سے نہیں حریم شاہ سے کیا ہے، اسی لیے اس نے مجھ سے کہا کہ آپ حریم شاہ کو کہیں کہ ٹک ٹاک چھوڑ دے جس پر میں نے کہا میں ایسا کیوں کہوں؟ اور رہی بات ہماری عمروں کے درمیان فرق کی تو میں نے اینکر سے بھی یہی کہا کہ ہمارے بیچ نکاح میں عمر کی کوئی رکاوٹ نہیں ہے”۔