بریکنگ نیوز: پنجاب کے اہم ترین ہسپتال میں 12 ڈاکٹروں کورونا وائرس کے شکار۔۔۔ پریشان کن تفصیلات منظر عام پر

ملتان(ویب ڈیسک) نشتر سپتال کے ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل سٹاف سمیت 18 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔تفصیلات کے مطابق نشتر میڈیکل یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر مصطفی کمال پاشا نے طبی عملے میں کورونا وائرس کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ 12 ڈاکٹرز اور 6 پیرا میڈکس میں وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔

ڈاکٹر مصطفی کمال پاشا نے بتایا کہ نشترہسپتال کے عملے نے گردوں کے ایک مریض کا علاج کیا تھا، مریض کے انتقال پر اس میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی تھی جس کے بعد وارڈ کے تمام متعلقہ افراد کا کورونا ٹیسٹ کرایا گیا جن میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے۔وائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی نے بتایا کہ جن افراد کا کورونا کا ٹیسٹ مثبت آیا ہے ان تمام لوگوں نے آئسولیشن اختیار کر لی ہے۔واضح رہے کہ اب تک ملک میں کئی ڈاکٹرز کورونا وائرس میں مبتلا ہو چکے ہیں جب کہ گلگت بلتستان اور کراچی میں ڈاکٹر کورونا سے شہید بھی ہو چکے ہیں۔ڈاکٹر اور طبی عملہ اس وقت کورونا کے خلاف جنگ میں صف اول کے سپاہی ہیں جو مشکل حالات کے باوجود جواں مردی سے وائرس کا مقابلہ کرنے میں مصروف ہیں۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق لاہور میں کورورنا وائرس کے مریضوں میں تیزی کے ساتھ اضافہ دیکھنے میں آ رہاہے ، سیل کی گئی سکندریا کالونی میں مزید 19 افراد میں وائرس کی تصدیق ہو گئی ہے ۔ایچ او ڈاکٹر شاہد نبی کے مطابق سکندریہ کالونی میں مزید 19 افراد میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے جس کے بعد علاقے میں تصدیق شدہ مریضوں کی تعداد 39 ہو گئی ہے۔انہوں نے مزید بتایا کہ سکندریہ کالونی سے اب تک 207 افراد کے نمونے ٹیسٹ کیلئے لیے گئے تھے، 35 ٹیسٹوں کی رپورٹ ابھی آنا باقی ہے۔ واضح رہے کہ ضلعی انتظامیہ کی جانب سے سکندریہ کالونی کو پہلے ہی سیل کیا جا چکا ہے۔یاد رہے کہ پنجاب بھر میں سرکاری اعدادو شمار کے مطابق کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 2425 ہو گئی ہے ۔