بریکنگ نیوز: کروناوائرس۔۔۔ حکومت نے گھروں میں بھی شادی کی تقریبات پر مکمل پابندی عائد کر دی

لاہور (ویب ڈیسک ) گھروں میں بھی شادی کی تقریبات پر پابندی عائد کر دی گئی۔ تفصیلات کے مطابق کرونا وائر س کے خطرات کے پیش نظر شادی ہالوں پر پابندی لگا دی گئی جس کے بعد سے طے شدہ شادیاں کھٹائی میں پڑ گئیں تھی۔ تاہم اب شہریوں کی مشکلات مزید بڑھا دی گئی ہیں ۔ حکومت پنجاب


نے گھروں میں بھی شادی کی تقریبات پر پابندی لگا دی ہے۔گھروں کے لان میں بھی فنکشنز نہیں کئے جا سکیں گے تاہم گھر کی عمارت میں شادی کی تقریب کو محدود کرکے اجازت دی گئی ہے۔شہریوں کی پریشانی کو مدنظر رکھتے ہوئے حکومت نے گھر کی عمارت میں سادگی سے شادی کی اجازت دی ہے۔۔ پاکستان بھر میں کرونا وائر س کے روک تھام کیلئے شادی ہالز کو بند کرنےکے ساتھ اجتماعات پر پابندی لگادی گئی تھی۔جس کے بعد کئی شادیاں موخر کردی گئیں۔تاہم کچھ افراد نے موقعے کا فائدہ اُٹھاتے ہوئے سادگی سے شادی کرلی ۔ اس سے قبل کرونا وائرس کے باعث شادی ہال بند ہونے پر دولہا وزیراعظم عمران خان پر برس پڑا۔ سوشل میڈیا پر ایک دولہے کی ویڈیو وائر ل ہو گئی ہے جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ شادی کی تقریب پر پابندی کے باوجود دولہا تیار ہو کر دولہن لینے شادی ہال پہنچ گیا ۔ شادی ہال بند دیکھ کر دولہا وزیراعظم عمران خان پر برس پڑا۔واضح رہے وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس منعقد کیا گیا تھا ، اجلاس میں کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے اہم فیصلے کیے گئے۔ قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، پاک فضائیہ اور پاک بحریہ کے سربراہان، چاروں صوبوں کے وزراء اعلیٰ، ڈی جی آئی ایس آئی، وزیردفاع، خارجہ، داخلہ اور وزیر قانون سمیت متعلقہ سیکرٹریز نے شرکت کی۔شفقت محمود نے کہا کہ 27مارچ کو دوبارہ اجلاس بلایا جائے گا جس میں کورونا وائر س کی صورتحال دیکھ کر تعلیمی اداروں میں مزید چھٹیوں سے متعلق جائزہ لیا جائے گا۔زید برآں قومی سلامتی کمیٹی نے 23مارچ کو یوم پاکستان کی تقریبات منسوخ کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا تھا۔