مودی سن لو،سب سے پہلے کشمیر!! وزیراعظم عمران خان کا بھارت کی تجارتی سمری پر صاف انکار۔۔۔گجراتی قصائی پر قیامت ڈھا دینے والی خبر

اسلام آباد (ویب ڈیسک ) ایک بار پھر منسوخ کردی۔ وزیراعظم کی معاونِ خصوصی فردوس عاشق اعوان نے وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا ہے کہ وزیراعظم نے کہا ہے کہ ہمارے لیے پہلے کشمیراورکشمیری ہیں اس لیے تجارت کوئی اہمیت نہیں رکھتی۔ معاونِ خصوصی نے کہا کہ

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارتوفاقی کابینہ نے آنے والے موسم گرما میں ڈینگی کے خطرے پر قابو پانے کے لئے چند ضروری ادویات بھارت سے درآمد کرنے کی ایک دفعہ کی اجازت کی تجویز مسترد کر دی اور اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ موجودہ حالات میں بھارت سے تجارت ممکن نہیں۔ذرائع کے مطابق کابینہ اجلاس میں بھارت سے کیڑے مار ادویات کی درآمد کا معاملہ ایک بار پھر مؤخر ہوگیا۔بھارت سے ڈینگی اسپرے منگوانے کی پنجاب حکومت کی سمری مسترد کردی ہے۔انہوں نے کہا کہ کابینہ اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے بھارت سے تجارت کے حوالے سے سمری کو مسترد کیا۔ یہ بھی معلوم ہوا ہےکہ وزیراعظم نے کہا کہ ہمارے لیے پہلے کشمیراورکشمیری ہیں اس لیے تجارت کوئی اہمیت نہیں رکھتی کابینہ کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ موجودہ حالات میں بھارت سے تجارت ممکن نہیں۔خیال رہے کہ 7 اگست 2019 کو قومی سلامتی کمیٹی نے بھارت سے دو طرفہ تجارت معطل کرنے کا فیصلہ کیا تھا جس کی 9 اگست کو وفاقی کابینہ نے بھی منظوری دی تھی۔ اس کے علاوہ اجلاس میں چینی کے معاملے کی تحقیقات کرنے والی کمیٹی کو پاکستان کمیشن آف انکوائری ایکٹ 2017کے تحت کمیشن آف انکوائری کے اختیارات دینے، ہر سال ’’پروف آف لونگ‘‘ (زندہ ہونے کا ثبوت) کے ضمن میں نادرا کی بائیو میٹرک ویریفکیشن نظام کو رائج کرنے ، وفاقی دارالحکومت کی حدود میں واقع اداروں میں گریڈ ایک سے 15 تک کی آسامیوں کیلئے اسلام آباد ڈومیسائل کے حامل افراد کا کوٹہ 50 فیصد مختص کرنے، مختلف اداروں میں تعیناتیوں کی منظوری دے دی گئی ہے۔