میرا جسم میری مرضی کے نتائج سامنے آگئے۔۔۔!! منصور علی خان کی اہلیہ کی تصاویر وائرل ، سوشل میڈیا پر ہلچل مچ گئی، سینئر صحافی نے بڑا قدم اُٹھا لیا

لاہور( نیوز ڈیسک) کیا سوشل میڈیا صارفین منصورعلی خان کی عورت مارچ میں شرکت کی فوٹوشاپڈ تصاویر شئیر کرتے رہے؟منصور علی خان نے عورت مارچ میں شرکت کی انکی اہلیہ بھی انکے ساتھ تھیں ۔ انکی اہلیہ کے ہاتھ میں ایک پلے کارڈ تھا جس پر کچھ نہیں لکھا تھا لیکن کچھ منچلوں

نے مبینہ طور پر اس پلے کارڈ پر قابل اعتراض نعرہ لکھ دیا جس کی منصور علی خان کو وضاحت کرنا پڑی۔منصور علی خان کا کہنا تھا کہ اوریجنل تصویر یہ ہے۔۔ باقی تصاویر فوٹوشاپڈ ورژن ہیں۔۔منصور علی خان نے مزید کہا کہ جو آپ کررہے ہیں ، آپ کا طرزعمل بتاتا ہے کہ آج کا آزادی مارچ کتنا اہم ہے۔منصور علی خان کا مزید کہنا تھا کہ وہ اپنے موقف سے ایک انچ بھی پیچھے نہیں ہٹیں گے۔


اس پر صدیق جان نے منصور علی خان کو جواب دیتے ہوئے کہا کہ و نعرہ تمہیں اپنی بیوی سے منسوب ہونا پسند نہیں، وہ نعرہ باقیوں کی ماوں بہنوں کے لیے ہوتو تمہیں کوئی مسئلہ نہیں، منافق آدمی، اگر ان یہ نعرے باقی عورتیں لگائیں تو تمہیں دل و جان سے قبول، ان کی حمایت بھی کرتے ہو، اور اپنی بیوی سے ان نعروں کا صرف منسوب ہونا بھی قبول نہیں۔

صدیق جان نے مزید کہا کہ منصورعلی خان صاحب …. جو نعرےآپکی اہلیہ محترمہ سےمنصوب ہونےپرآپکی غیرت کوگوارا نہیں ہوئے، یہی نعرےطلاق یافتہ36 عورتوں کا ٹولہ پورے پاکستان کی خواتین سے لگوانا چاہتا ہے، پس ثابت ہوا کہ آپ بھی دل سے ان نعروں کے ساتھ نہیں، اگر ساتھ ہوتوپھرڈرکیسا؟ آپکی بیوی لگائےیاکسی اورکی بہن؟؟


واضح رہے کہ منصور علی خان نے عورت مارچ کی کھل کر حمایت کی۔ خلیل الرحمان قمر نے جب ماروی سرمد سے متعلق نازیبا زبان استعمال کی تو منصور علی خان نے اسکی کھل کر مذمت کی اور خلیل الرحمان قمر کو اپنے پروگرام میں مدعو کیا اور ٹف ٹائم دئیے رکھا۔