اب بھی کہو کپتان کچھ نہیں کر رہا۔۔!! وزیراعظم عمران خان کی ہدایت اور فوری اقدامات کے ثمرات عام عوام تک پہنچنے لگ گئے

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وزیراعظم عمران خان کی ہدایت اور اقدامات کے ثمرات عام عوام تک پہنچنے لگے کیونکہ اشیائے خوردونوش کی قیمتیں نیچے آگئیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم کے اقدامات کے بعد آٹا، دال، گھی، سبزیوں اورپھل کی قیمتوں میں کمی ہوئی، معاشی استحکام آنے کے بعد ایک ہفتے کے دوران مہنگائی

کی شرح میں تین فیصد کمی ریکارڈ کی گئی۔ بیورو اسٹیٹکس کے مطابق ایک ہفتے کے دوران مہنگائی 11.6 فیصد پر آگئی ہے۔ قیمتوں میں ہونے والی کمی کے بعد شہریوں نے اطمینان کا اظہار کیا اور وزیراعظم عمران خان کے اقدامات کو سراہا۔ یاد رہے کہ پانچ مارچ کو وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت حکومتی اور پارٹی ترجمانوں کا اجلاس ہوا تھا جس میں وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے ترجمانوں کو پی ایس ڈی پی پر بریفنگ دی تھی۔ وزیراعظم کا کہنا تھا کہ حکومت کے مثبت اقدامات کو اعداد وشمار کے ساتھ اجاگر کریں، میڈیا پر مکمل اعداد وشمار کے ساتھ جایا کریں۔انہوں نے مزید کہا کہ مہنگائی میں کمی کے لیے تمام اقدامات کی نگرانی خود کر رہا ہوں۔ یاد رہے کہ 2 مارچ کو سینیٹ اجلاس میں سوالات کا جواب دیتے ہوئے وفاقی وزیر برائے اقتصادی امور حماد اظہر نے کہا تھا کہ مہنگائی کی شرح میں کمی ہوئی۔ انہوں نے بتایا کہ تھا کہ مہنگائی کی شرح 14.6 سے کم ہوکر 12.4 فیصد ہوگئی، کمی کی وجہ تیل اور ڈیزل میں پانچ روپے فی لیٹر کمی ہے۔ اس سے قبل سینیٹ اجلاس میں سوالات کا جواب دیتے ہوئے حماد اظہر نے بتایا کہ تیل، ڈیزل میں5 روپےکمی کے بعدمہنگائی میں کمی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ رواں سال فروری میں برآمدات میں 13.6 فیصداضافہ ہوا جب کہ پچھلے سال 32 فیصدخسارہ کم ہوا اور رواں برس 70 فیصد کم ہوا۔ حماد اظہر نے کہا کہ جب اقتدار سنبھالا تو پاکستان کےپاس صرف 2 ہفتےکے ریزرو رہ گئے تھے، ہماری حکومت نے سخت حالات سےملک کو نکالا۔ وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ ہماری حکومت میں اسٹیٹ بینک کےذخائرمیں 50فیصداضافہ ہوا، روپےکی قدر کو مستحکم کرنےکیلئے ایک ڈالر بھی مارکیٹ میں نہیں جھونکا گیا۔ اس سے قبل معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں کہا سی پی آئی کےمطابق خوراک کی قیمتوں میں واضح کمی دیکھنےمیں آئی، اشیائےخوردونوش کی قیمتیں فروری میں 12.4 فیصدکم ہوئیں۔