جاؤ اور یہ ناجائز حقوق مغرب میں جا کر مانگوکیونکہ۔۔۔۔۔ دی لیجنڈ جاوید میانداد نے عورت مارچ والوں کے کان کھول دیے

لاہور(ویب ڈیسک) عورتوں کے حقوق ہیں ایک حد تک ہیں وہ سارے اسلام نے دئیے ہیں”- دی لیجنڈ جاوید میانداد کا عورت مارچ والوں کو پیغام دی لیجنڈ جاوید میانداد کا عورت مارچ والوں کو پیغام۔ اپنے یہ ناجائز حقوق مغرب ممالک میں جاکر مانگیں۔عورتوں کے حقوق ہیں ایک حد تک ہیں وہ سارے

اسلام نے دۓ ہیں۔خلیل الرحمان قمر کے بعد جاوید میانداد بھی عورت مارچ کی مخالفت میں سامنے آگئے۔ جاوید میانداد نے کہا کہ عورت کے جو حقوق ہیں، وہ اسلام نے بتادئیے ہیں۔یہ کوئی مغربی ملک نہیں ہے۔ اسلامی ممالک میں عورتوں کے حقوق اور ہیں۔جاوید میاندان نے مزید کہا کہ عورت کو جو کرنا ہے، پردے میں کرے، پردے میں آواز اٹھائے۔ آج سے 15 سال پہلے کیوں کوئی عورت نہیں اترتی تھی؟جاوید میانداد کا کہنا تھا کہ اسلام نے عورت کو بہت حقوق دئیے ہیں۔ عورت کو جو حقوق اسلام نے دئیے ہیں انہی میں رہنا چاہئے۔ عورت کا فرض ہے کہ وہ بچوں کو صحیح راستہ بتائے۔عورت مارچ میں استعمال ہونیوالے بینرز اور نازیبا نعروں پر جاوید میانداد کا کہنا تھا کہ ، ماں کے قدموں کے نیچے جنت ہے۔ کیا وہ عورت سڑکوں پر جائے جس کے قدموں میں جنت ہے؟ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق سینیٹر رحمان ملک نے عورت مارچ کی حمایت کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ خواتین کے اپنے حقوق کے لئے مارچ کرنے کا پورا حق حاصل ہے، ہماری خواتین کو ان کے احترام، عزت اور حقوق کے لئے مارچ کرنے دیں۔ عورت مارچ کی مکمل حمایت کرتے ہیں تاکہ قوم کی تمام زینب محفوظ رہے، اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ خواتین کو اپنے اختیارات اور گورننس میں مساوی حقوق کا مطالبہ کرنے کا پورا حق حاصل ہے، خواتین کو انکی عصمت دری اور گھریلو تشدد سے بچانے کے لئے سخت قوانین کا مطالبہ کرنے دیا جائے جو خواتین میرے ملک کی زینب کو بچانے کے لئے مارچ کررہے ہیں ہم انکے ساتھ کھڑے ہیں میڈیا پر کسی کو صنف “مرد یا خواتین” کی بنیاد پر گالیاں دینا جرم قرار دیا جائے۔ سینیٹر رحمان ملک نے کہا کہ میڈیا پر صنف کی بنیاد پر گالیاں دینے والوں کو ایک سال قید اور الیکٹرانک میڈیا پر انکی تاحیات پابندی عائد کی جانی چاہئے ان کا کہنا تھا کہ ہمارے معاشرے کی اصلاح اور باہمی احترام پیدا کرنے کے لئے اس طرح کے سخت اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے۔