یکم مارچ سے پٹرول کی قیمت کیا ہوگی؟ عمران خان نے نا ممکن کو ممکن کر دکھایا، قوم کے لیے سب سے بڑا ریلیف

اسلام آباد( نیوز ڈیسک) سینئرصحافی و تجزیہ کار سمیع ابراہیم کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان اس وقت شدید مشکلات کا شکار ہیں، ملک میں مہنگائی بہت زیادہ ہے،جس پر عمران خان پریشان ہیں کہ اگر وہ مہنگائی کو کم نہیں کرتے تو ان کے ووٹرز ان سے خفاء ہیں اور اگر چیزوں

کی قیمتیں زیادہ ہوتی ہیں تو آئی ایم ایف والے خوش ہو جائیں گے۔تفصیلات کے مطابق اپنے یوٹیوب چینل پر جاری ویڈیو میں سمیع ابراہیم کا کہنا تھا کہ اس ساری صورتحال کے بعد وزیراعظم عمران خان نے فیصلہ کیا ہے کہ کچھ بھی ہو جائے پٹرول کی قیمتوں میں کمی چاہیئے ،پٹرول کی قیمتیں 25 سے 30روپے فی لیٹر نیچے لائی جائیں گی اسی طرح دیگر پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بھی کم کرنے کی وزیراعظم نے متعلقہ اداروں کو سخت ہدایات جاری کر دی ہیں، اس پر عمران خان کی شدید مخالفت ہو رہی ہے۔انھوں نے کہا کہ آئی ایم ایف کی لابی پاکستان کے اندر بھی اور پاکستان سے باہر بھی اس مسئلے پر پھڈا کر رہی ہے،مشیر خزانہ ڈاکٹر حفیظ شیخ اور آئی ایم ایف کی لابی چاہتی ہے کہ یہاں پر ٹیکس زیادہ ہو اور چیزوں کی قیمتیں بڑھیں اور اسی پرانے فارمولے کے تحت کام کیا جائے لیکن وزیراعظم عمران خان نے صاف الفاظ میں اس چیز کو مسترد کر دیا ہے۔سمیع ابراہیم نے کہا کہ یہی وجہ ہے کہ ایف بی آر کے چیئرمین شبر زیدی چونکہ وزیراعظم عمران خان کے ساتھ تھے اور ڈاکٹر حفیظ شیخ لابی کے خلاف تھے اس لئے مشیر خزانہ ڈاکٹر حفیظ شیخ نے چیئرمین ایف بی آر کے چیئرمین شبر زیدی کو چلتا کیا اور وہ چپکے سے ایف بی آر سے نکل گئے،آئی ایم ایف کی مخالفت کرنے کیلئے بڑا دل گردہ درکار ہوتا ہے مگر عمران خان نے یہ کیا اور یہ کہا کہ میں نے عوام کے ساتھ وعدے کئے ہوئے ہیں اور میں ان وعدوں کو ہر حال میں پورا کروں گا۔