عمران خان کو کامیابیاں ملنا شروع۔۔۔!!! ڈالر 8 ماہ کی کم ترین سطح پر آگیا، پاکستانی روپیہ مستحکم

کراچی (نیو ز ڈیسک ) ڈالر کی قیمت میں کمی ، روپیہ مزید مستحکم ہو گیا ۔ تفصیلات کے مطابق روپے کی نسبت ڈالر کی قیمت 30 پیسے کم ہو گئی ہے۔اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت 154 روپے 90 پیسے رہی۔ روپیہ مستحکم ہوا ، یوروکی قیمت میں کمی واقعہ ہوئی۔ اس سے قبل مقامی

کرنسی مارکیٹوں میں بدھ کو پاکستانی روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر کی قدر میں کمی ریکارڈ کی گئی جب کہ یورو اور برطانوی پاونڈ کی قدر میں اضافہ اور سعودی ریال ویو اے ای درہم کی قدر میں کمی ہوئی۔ فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کے مطابق بدھ کے روز انٹر بینک میں امریکی ڈالر کی قدر میں2پیسے کی کمی ہوئی جس سے ڈالر کی قیمت خرید154.40روپے سے گھٹ کر 154.38روپے اور قیمت فروخت154.50روپے سے گھٹ کر 154.48 روپے ہوگئی جب کہ اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت خرید10پیسے کی کمی سی154.30روپے سے گھٹ کر154.20روپے اور قیمت فروخت 154.60روپے سے گھٹ کر154.50روپے ہوگئی۔دیگر کرنسیوں میں یورو کی قیمت خرید20پیسے کے اضافے سی 167.80روپے سے بڑھ کر168روپے اور قیمت فروخت169.30روپے سے بڑھ کر169.50روپے ہوگئی جب کہ برطانوی پاونڈکی قیمت خرید198.50روپے سے بڑھ کر199.50روپے اورقیمت فروخت 200روپے سے بڑھ کر 201روپے ہوگئی ۔فاریکس رپورٹ کے مطابق سعودی ریال کی قیمت خرید40.95روپے سے گھٹ کر40.90روپے اور قیمت فروخت41.25روپے سے گھٹ کر41.20روپے ہوگئی۔ تاہم اب ڈالر کی قیمت مزید 30 پیسے گر گئی ہے۔ دوسری جانب گزشتہ روز رواں ہفتے کے دوران سٹاک مارکیٹ میں کاروبار کا ملا جلا رحجان رہا، رواں ہفتے کے پہلے کاروباری روز کے دوران 846.93 پوائنٹس کی مندی دیکھی گئی تاہم دوسرے کاروباری روز کے دوران 417.76 پوائنٹس کی تیزی دیکھی گئی۔تیسرے کاروباری روز کے دوران بھی 816.67 پوائنٹس کی تیزی دیکھی گئی تھی، چوتھے کاروبار روز کے دوران 75.69 پوائنٹس کی گراوٹ دیکھی گئی جبکہ اسی کا تسلسل آج کاروباری آخری روز کے دوران بھی دیکھنے کو ملا جب انڈیکس کاروبار کے اختتام پر 212.18 پوائنٹس گر گیا۔آج کاروبار کا آغاز ہی مندی سے ہوا جب پہلے دو گھنٹوں کے دوران انڈیکس 205 پوائنٹس گر گیا اور انڈیکس 40250 کی سطح پر دیکھا گیا۔ غیر یقینی صورتحال کا تسلسل نماز جمعہ کے بعد بھی دیکھا گیا اور وقفے کے ایک گھنٹے بعد انڈیکس میں مزید 60 پوائنٹس کی تنزلی دیکھی گئی اور دوپہر تین بجے انڈیکس 40190.33 پوائنٹس کی سطح پر آیا۔ٹریڈنگ کے دوران انڈیکس میں ایک موقع پر تیزی دیکھی گئی اور انڈیکس 40603.16 پوائنٹس کی بلند ترین سطح پر دیکھا گیا تاہم آخری لمحات کے دوران انڈیکس میں 40094.29 پوائنٹس کی نچلی ترین سطح بھی دیکھی گئی۔آج پاکستان سٹاک مارکیٹ میں کاروبار کا اختتام 212.18 پوائنٹس کی مندی کے بعد 40243.26 پوائنٹس کی سطح پر پہنچ کر بند ہوا۔ کاروبار کے دوران انڈیکس کی دو حد گر گئیں۔ گرنے والی حدوں میں 40300 اور 40400 کی حدیں شامل ہیں۔ٹریڈنگ کے اختتام پر آج پورے کاروباری روز کے دوران کاروبار میں 0.53 فیصد کی گراوٹ دیکھی گئی جبکہ 8 کروڑ 58 لاکھ 10 ہزار 470 شیئرز کا لین دین ہوا۔ انویسٹرز کی طرف سے زیادہ شیئرزکی فروخت کو ترجیح دی گئی۔معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ پاکستان سٹاک مارکیٹ میں غیر یقینی صورتحال کی بڑی وجوہات میں سے رواں ہفتے کے دوران ایف اے ٹی ایف پر ممکنہ اعلان ہے جس کی وجہ سے سرمایہ کار مضطرب کا شکار ہیں اور آج دن بھر ٹریڈنگ کے دوران حصص کی خریداری اور فروخت دیکھی گئی۔