یوم یکجہتی کشمیر۔۔۔ مگر وزیراعظم عمران خان اچانک کہاں پہنچ گئے؟ تازہ ترین خبر آ گئی

مظفرآباد (ویب ڈیسک) وزیراعظم عمران خان کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے مظفرآباد پہنچ گئے،وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر نے وزیراعظم پاکستان کا استقبال کیا، وزیراعظم عمران خان کو مظفرآباد پہنچنے پر گارڈ آف آنر پیش کیا گیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی ، وزیر برائے امور کشمیر علی امین گنڈا پور

وزیراعظم کے ہمراہ ہیں ،چیئرمین کشمیر کمیٹی سید فخرامام بھی وزیراعظم کے ہمراہ ہیں ۔ وزیراعظم عمران خان آزادجموں و کشمیر قانون ساز اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کریں گے ،وزیراعظم پاکستان کے اصولی موقف سے کشمیری نمائندوں کو آگاہ کریں گے ،وزیراعظم عمران خان مظفرآباد میں حریت کانفرنس کے وفد سے ملاقات بھی کریں انہوں نے کہا کہ جن ممالک میں بہتر جمہوریت ہے وہاں خوشحالی زیادہ ہے اور غربت کم ہے، دنیا کے نظام کا جائزہ لیں تو جن ممالک میں جمہوریت ہے وہ آگے بڑھ گئے اور جن ممالک میں بادشاہت تھی، میرٹ، مفاہمت اور ڈسکشن نہیں تھی وہ پیچھے رہ گئے۔ انہوں نے کہا کہ یہاں تک میں آپ کے ساتھ ہوں۔ وزیراعظم نے کہا کہ دنیا کے سب سے خوشحال ممالک دیکھیں اور دوسری طرف غریب ترین ممالک کا جائزہ لیں تو یہ خوشحالی اس لئے نہیںہے کہ اللہ نے انہیں زیادہ وسائل دئیے ہیں یا غریب ممالک کے پاس وسائل نہیں ہیں، جتنے خوشحال ممالک ہیں وہاں شفافیت ہے، بدعنوانی نہیں جبکہ غریب ممالک کے پاس سب سے زیادہ وسائل ہیں تاہم کرپشن کی وجہ سے وہ غریب ترین ہیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ کوئی میرے گھر میں چوری کرتا ہے اور کرپشن کرتا ہے تو کیا میں ان سے مفاہمت کر لوں۔ وزیراعظم نے اس موقع پر وزیراعظم آزاد کشمیر کو کہا کہ آپ نے بھی کچھ شعر پڑھے ہیں جبکہ میں بھی ایک شعر پڑھتا ہوں کہ ’’مفاہمت نہ سکھاجبر ناروا سے مجھے، میں سربکف ہوں کہ لڑا دوں کسی بلا سے مجھے‘‘۔ وزیراعظم نے کہا کہ بدعنوان لوگ جو کرپشن کر کے پیسے باہر لے گئے ان سے مفاہمت کا مجھے نہ کہا جائے۔ میں جب دیکھتا ہوں کہ ایک ایک ادارے میں کرپشن کی داستانیں سامنے آتی ہیں، یہ ذاتی لڑائی نہیں بلکہ ملک کی لڑائی ہے۔ چین کی ترقی کے پیچھے 450سے زائد وزراء کو جیلوں میں ڈالنا ہے جبکہ امریکہ میں تیس تیس سال بعدکرپشن کرنے والوں کو جیل میں ڈال دیا گیا۔