اب اُڑے گے پُرزے۔۔۔!!! وفاقی حکومت نے ’ آئی جی سندھ ‘ کے لیے کس نام کی منظوری دے دی؟

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وفاقی حکومت نے آئی جی سندھ کے لیے عمران احمر کا نام تجویز کردیا جبکہ گورنر سندھ عمران اسماعیل اس سلسلے میں وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ سے ملاقات کریں گے۔ ذمہ دار ذرائع نے ہم نیوز کو بتایا کہ وفاقی کابینہ نے مشتاق مہر، غلام قادر تھیبو اور کامران فضل

کے ناموں پر اعتراض کیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ گورنر و وزیراعلیٰ سندھ کے مکمل اتفاق کے بعد ہی نیا آئی جی سندھ تعینات ہوگا۔ دوسری جانب دیگر ذرائع کا کہنا ہے کہ آئی جی سندھ کی تعیناتی کے معاملے میں وفاق اور سندھ حکومت کے درمیان ڈیڈ لاک پیدا ہوگیا ہے۔ ان کے مطابق سندھ حکومت آئی جی سندھ کی تعیناتی کے معاملے پر گورنر سندھ سے مشاورت نہیں کرے گی۔ سندھ حکومت کا اس حوالے سے مؤقف ہے کہ آئی جی سندھ کی تقرری انتظامی معاملہ ہے، آئین و قانون میں گورنر سے مشاورت کا ذکر نہیں۔ حکومت سندھ کے مطابق کسی صوبے میں آئی جی سندھ پولیس کو ہٹانے تقرری کے لیے گورنر سے مشاورت نہیں ہوئی۔ اس سے قبل وزیراعظم عمران خان سے آئی جی سندھ نے ملاقات کی جس میں صوبائی حکومت کی جانب سے عائد الزامات پر گفتگو کی گئی۔ وزیراعظم عمران خان سے آئی جی سندھ کلیم امام نے ملاقات کی جس میں سندھ میں امن و امان کی صورتحال پر بات چیت کی گئی۔ ذرائع کے مطابق آئی جی کلیم امام نے سندھ حکومت کی طرف سے عائد الزامات اور سندھ پولیس کی کارکردگی سمیت حکومت سندھ کے افراد کے خلاف جاری کارروائیوں سے بھی وزیراعظم کو آگاہ کیا۔ وزیراعظم عمران خان نے سندھ میں امن و امان کی صورتحال سے متعلق آئی جی کلیم امام کی خدمات کو سراہا جب کہ ذرائع کا کہنا ہے کہ آئی جی سندھ کلیم امام کو وفاق میں اہم ذمہ داریاں ملنے کا بھی امکان ہے۔