وقت بتائے گا کس نے کس کیخلاف سازش کی۔۔۔ وزیراعلیٰ کے پی کے کو گرانے کی کوشش کون کرتا رہا؟ عاطف خان نے بالآخر خاموشی توڑتے ہوئے بڑا اعلان کر دیا

لاہور(ویب ڈیسک) خیبرپختونخواکے سابق وزیر کھیل و ثقافت عاطف خان نے کہا ہے کہ جس کو وزیراعظم چاہتے ہیں وہی وزیراعلی ٰ رہتاہے یہ نہیں ہوسکتا کہ محمود خان جو وزیراعظم کا انتخاب تھے اسے ہٹا سکوں ،میں اورشہرام وزیراعلیٰ محمود خان کے پاس دس سے بارہ بار گئے اور کہا کہ ہم آپ کے ساتھ چلنا چاہتے

ہیں وزیراعظم نے بھی ہمیں بٹھا کر کہا کہ یہ محمود خان وزیراعلیٰ ہیں اورسب نے اکٹھاہوکر چلناہے ۔ پروگرام ہارڈ ٹاک پاکستان میں میزبان معیدپیرزادہ سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ محمود خان کے ارد گرد ایسے لوگ ہیں جو انہیں بار بار ڈرا رہے تھے کہ شاید ہم انہیں گرانا چاہتے ہیں اس لئے ہمیں ہٹایا گیا، وقت بتائے گا کس نے سازش کی ہے ،عمران کو بھی پتہ چل جائے گا کہ حقیقت کیا ہے ،شاید عمران کو یہ بتایا گیا کہ ہم محمود خان کو کام کرنے نہیں دے رہے ، عمران بی آرٹی کو نہیں بناناچاہتے تھے ، میرے رشتہ دار فوج میں ہیں ہم سیاستدان ان سے ملتے رہتے ہیں میں کسی ریٹائرڈ افسر سے کسی سازش کیلئے نہیں ملا، آج بھی جو تحفظات ہیں وہ وزیراعظم سے ملاقات میں ہی بتائیں گے ،جس نے سازش کی اس کا پتہ چل گیا ، وقت آنے پربتائیں گے ۔ سابق وزیر صحت کے پی کے شہرام ترکئی نے کہا کہ پرویز خٹک خود وزیراعلیٰ بنناچاہتے تھے لیکن عمران ،عاطف خان کو بناناچاہتے تھے اس لئے وہ کچھ اختلاف رکھتے تھے ۔ میں نے تو بی آرٹی کے اجلاس میں کبھی شرکت کی نہ مجھے بلایا گیا ، ہم نے وزیراعظم سے ملاقات کا وقت مانگا لیکن وہ مصروف تھے ہماری بات سنی ہی نہیں گئی ہم پر جو الزامات ہیں وہ ہمارے سامنے رکھیں اگر ہم دفاع نہ کرسکیں تو خود ہی بیگ اٹھا کرچلے جائیں گے ، ہمارے خلاف سازش ہوئی،ہمارے گورننس ، بڑھتی ہوئی کرپشن کے بارے میں تحفظات ہیں ، ہمارا کام پارٹی چیئرمین کو ٹھیک باتیں بتانا اورایسا نہیں کرنا تو پھر ہمیں تحریک انصاف میں آنے کی کیا ضرورت تھی۔