عمران خان کے صبر کا پیمانہ لبریز۔۔۔!!! پارٹی میں موجود کالی بھیڑوں کے حوالے سے کیا فیصلہ کر لیا؟ خبر آتے ہی کابینہ میں ہلچل مچ گئی

لاہور( نیوز ڈیسک) سینئر صحافی صابر شاکر نے کہا ہے کہ وزیر اعظم پارٹی میں موجود منفی عناصر کوجلد شٹ اپ کال دیں گے، تحریک انصاف کے اندر کچھ عناصر عثمان بزدار کو ہٹانے کیلئے سرگرم عمل ہیں،عثمان بزدار کے خلاف آئندہ دنوں کچھ اور بغاوتیں بھی ہوں گی، فواد چودھری نے تو وزیراعظم کو خط بھی لکھ دیا ہے۔

انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ فواد چودھری نے عثمان بزدار کیخلاف وزیراعظم کو خط لکھ دیا ہے، کہ عثمان بزدار بادشاہوں کی طرح حکومت چلا رہے ہیں،ق لیگ بھی اب یہی بات کررہی ہے اور فواد چودھری بھی یہی بات کررہے ہیں۔تحریک انصاف کے اندر کچھ عناصر عثمان بزدار کو ہٹانے کیلئے سرگرم عمل ہیں،ایسے عناصر پارٹی کے اندر اور باہر موجود ہیں، وزیر اعظم عمران خان جلد ان عناصر کو بھی شٹ اپ کال دینے والے ہیں۔عثمان بزدار کا قصور یہ ہے کہ وہ براہ راست وزیراعظم سے ہدایات لیتے ہیں۔عثمان بزدار کے خلاف آنے والے دنوں میں کچھ اور بغاوتیں بھی ہوں گی۔دوسری جانب سینئرتجزیہ کار حامد میر کا کہنا ہے کہ چائے کی پیالی میں جس طوفان کا ذکر کیا جارہا ہے ، اس طوفان سے کوئی گھبرائے یا نہ گھبرائے لیکن میڈیا کو ضرور گھبرانا چاہیے۔یہ جو تحریک انصاف کے نام نہاد اتحادی ہیں، یہ دراصل کبھی بھی ان کے اتحادی نہیں تھے، یہ اگر عمران خان کو ہٹانے کیلئے مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کے ساتھ ملکر کوئی تبدیلی لاتے ہیں، تواس کے بعد کیا ہوگا؟ لیکن ان جماعتوں کے بیک گراؤنڈ کا سب کو پتا ہے۔ابھی میڈیا پر چھوٹے موٹے معاملات چل رہے ہیں، لیکن جیسے ہی عمران خان ہٹ جائیں گے، جو کہ ان سب نے ملکر ہٹانا ہے، اس کے بعد ٹارگٹ نمبر ون میڈیا ہوگا۔یہ نوشتہ دیوار ہے، عمران خان بہت زیادہ روکنے کی کوشش کررہے ہیں اورسامنا کررہے ہیں ، عمران خان کی پارٹی کے لوگ بھی اب باتیں کررہے ہیں، لیکن جب یہ آئیں گے تو ان کا میڈیا کے بارے میں جو خیال ہے وہ سب کو پتا ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ سب عمران خان کو ہٹانے کا فیصلہ کرچکے ہیں، ابھی یہ کھل کربات نہیں کررہے، انہوں نے عمران خان کو ہٹانا ہے اور کسی نہ کسی طریقے سے ہٹائیں گے۔لیکن جب عمران خان ہٹ جائے گا تو پھر ہمارے حق میں بولنے کیلئے کوئی نہیں ہوگا،آج بڑی ہم باتیں کرتے ہیں کہ فروغ نسیم نے یہ پیپر تقسیم کیا اور واپس لے لیا۔عمران خان کے جانے کے بعد پرویز مشرف کے اتحادی ہوں گے جو ایسی کی تیسی پھیر دیں گے۔