لاہور ہائیکورٹ: نئے سال کا پہلا دن ۔۔۔۔ کس اہم شخصیت کی ضمانت کی درخواست پہلا کیس مقرر ہوا ؟ آپ بھی جانیے

لاہور(ویب ڈیسک) لاہور ہائیکورٹ میں یکم جنوری 2020 کا پہلا کیس سماعت کے لئے مقرر کر دیا گیا، جسٹس طارق عباسی کی سربراہی میں دو رکنی بینچ فواد حسن فواد کی درخواست ضمانت پر سماعت کرے گا۔ سابق وزیراعظم نواز شریف کے پرسنل سیکرٹری فواد حسن فواد نے درکواست ضمانت میں موقف اختیار کیا

ہے کہ آمدن سے زائد اثاثوں کے کیس سے متعلق ابھی تک نیب کی جانب سے ریفرنس دائر نہیں کیا جا سکا، جب کہ اس حوالے سے نیب نے قواعد وضوابط پورے نہیں کیے ۔ لٰہذا درخواست ضمانت منظور کی جائے ۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق سال 2019 ختم کرتے ہوئے اینکر وتجزیہ نگار رحمان اظہر نے ایک نجی ٹی وی پروگرام میں تجزیہ کرتے ہوئے کہا کہ عوام کو اگر کسی ادارے نے سب سے زیادہ مایوس کیا ہے تو وہ پارلیمنٹ ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ عوام نے ان کو منتخب کیا تھا اور یہ لوگ پارلیمنٹ میں آئے تھے۔ لیکن پوری کی پوری پارلیمنٹ نے مایوس کیا ہے۔ رحمان اظہر کا کہنا تھا کہ پارلیمنٹ میں بحث ومباحثے سے لے کر بل آنے تک، پارلیمنٹ کسی ایک موقع پر بھی مستحکم نہیں ہو سکی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ عوام نے ان نمائندوں کو منتخب کیا تھا لیکن انہوں نے عوام کے ریلیف کے لئے کوئی کام نہیں کیا۔ پارلیمنٹ پرتنقید کرتے ہوئے رحمان اظہر نے اس کی کارگرگی کو مایوس کن قرار دیا۔ حکومت کی قانوں سازی پر تنقید کرتے ہوئے رحمان اظہر کا کہنا تھا کہ جہاں قانون سازی بل کی بجائے آرڈیننس سے ہو، وہاں پارلیمنٹ کا یہی حال ہوتا ہے۔ حکومت پر تنقید کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ حکومت خود پارلیمنٹ کا اجلاس بلانے سے ڈرتی ہے کیونکہ اسے نہیں معلوم کے پارلیمنٹ کا ماحول کیسا ہو گا۔ حکومت پر مزید تنقید کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ حکومت کی ترجیحات مختلف ہیں۔عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ عمران خان کہا کرتے تھے کہ میں ادارے بہتر بنا دوں گا۔ پارلیمنٹ ملک کا اہم ترین ادارہ ہے، اس کا حال دیکھ کر لگتا نہیں ہے کہ عمران خان اداروں میں بہتری کے لئے کام کر رہے ہیں۔