زوال کے باوجود شریف خاندان کے کاروبار دن دگنی رات چوگنی ترقی کرنے لگے ۔۔۔۔ چوہدری شوگر ملز کے شیئرز کے حوالے سے ناقابل یقین خبر

لاہور (ویب ڈیسک) چوہدری شوگر مل کیس میں لاہور ہائی کورٹ نے مریم نواز کی درخواست ضمانت منظور کی، عدالت نے مریم نواز کو اپنا پاسپورٹ جمع کرانے کا حکم دیا تھا۔ عدالت نے ایک ایک کروڑ کے روپے کے دو مچلکے داخل کرانے کا حکم دیا۔ اب حیران کن تفصیلات سامنے آئیں ہیں

کہ خسارے میں جانے کے باوجود چوہدری شوگر مل کے شئیرز میں حیران کن حد تک اضافے کا انکشاف ہوا ہے۔ تفصیلات کے مطابق نیب نے شریف فیملی کی چوہدری شوگر مل کیس میں مبینہ کرپشن داستان کی الجھی ہوئی گھتی مالیاتی ماہرین کی مدد سے سلجھانا شروع کردی۔ انکشاف ہوا ہے کہ خسارے میں جانے کے باوجود شوگر مل کے شئیرز کی تعداد میں حیران کن حد تک اضافہ ہوا اور ساتھ ہی بینکوں سے لیا جانے والا قرض کروڑوں کے بجائے اربوں روپے میں چلا گیا پھر اچانک خسارہ کم ہوا اور فائدے میں تبدیل ہوگیا۔ چوہدری شوگر ملز کیس میں مریم صفدر ایک کروڑ 24 لاکھ شیئر کی مالک نکلیں، ایک نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں حیرت انگیز انکشافات سامنے آئے، رپورٹ کے مطابق غیر ملکی شیئر ہولڈر نے مریم صفدر کو کروڑوں کے شیئر کیوں منتقل کیے بڑے سوال پیدا ہو گئے، وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر نے کہاکہ دیکھا جائے گا کہ مریم نواز نے 2008ء میں یہ شیئر خریدے تو کتنی رقم ادا کی گئی،نیب دیکھے گا کہ چوہدری شوگر ملز کیس میں شیئرز کیسے منتقل ہوئے، چوہدری شوگر ملز کی دستاویزات کے مطابق اس کے چیف ایگزیکٹو یوسف عباس شریف جن کو نیب نے طلب کیا تھا، ان دستاویزات میں شیئرز ہولڈر کے نام بھی ہیں، جس میں میاں محمد عباس شریف سے لے کر حسین نواز، حمزہ شہباز، شہباز شریف اورخاندان کے دیگر افراد کے نام موجود ہیں، گیارہویں نمبر پر مسز مریم صفدر کا نام ہے جن کے شیئرز ایک کروڑ 24 لاکھ چودہ سے پچپن ہیں، نواز شریف کے سولہ سالہ شیئرز ہیں، سعید سیف بن جبر الجاویدی نے مریم نواز کو 94 لاکھ شیئرز ٹرانسفر کئے، شیخ ذکاء الدین نے مریم نواز کو 20 لاکھ شیئرز ٹرانسفر کئے اور ہانی احمد جمجون نے مریم نواز کو 97 ہزار شیئرز اکیس مئی 2008ء کو ٹرانسفر کئے۔