پاکستانی معیشت کو 440 وولٹ کا جھٹکا۔۔۔!!! سرمایہ کاروں نے ہاتھ کھینچ لیا، پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں مندی کا رجحان، ڈالر بھی مہنگا

کراچی (نیوز ڈیسک ) پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں جمعرات کو بھی اتار چڑھاؤ کا سلسلہ جاری رہنے کے بعد مندی غالب آگئی جس کے نتیجے میں کے ایس ای 100انڈیکس مزید17.25پوائنٹس کی کمی سے40514.17پوائنٹس کی سطح پرآ گیاجب کہ 61.47فیصد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈکی گئی لیکن مخصوص مہنگے شیئرز کی قیمتیں بڑھنے کے باعث مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت میں 28ارب11کروڑ13لاکھ روپے کا اضافہ ریکارڈ گیا لیکن کاروباری حجم بدھ کی نسبت 25.57فیصد کم ہے۔

گزشتہ روز اسٹاک ایکس چینج میں ٹریڈنگ کا آغازمثبت زون میں ہوا جس کے سبب ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پرکے ایس ای100انڈیکس40773.66پوائنٹس کی سطح پرپہنچ گیالیکن بعد ازاں منافع کے حصول کی عرض سے شیئرز کی فروخت کا باوٗ بڑھ گیا جس سے تیزی کا رجحان مندی میں بدل گیا یہاں تک کہ انڈیکس 40170پوائنٹس کی نچلی سطح پر پہنچ گیا

بعد میں ریکوری بھی آئی اور مزکورہ حد برقرار نہ رہ سکی لیکن مندی کا رجحان غالب آگیا اورمارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس 17.25پوائنٹس کی کمی سے40514.17پوائنٹس پر بند ہوا جب کہ کے ایس ای30انڈیکس 21.24پوائنٹس کی کمی سے18408.29پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس104.30پوائنٹس کے اضافے سے 29041.75پوائنٹس پر بند ہوا۔گزشتہ روز مجموعی طور366کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا جن میں سے125کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ225میں کمی اور16میں استحکام رہا۔

تعداد میں کم ہونے کے باجود مہنگے شیئرز کی قیمتیں بڑھنے کے باعث مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت28ارب11کروڑ13لاکھ روپے کے اضافے سے بڑھ کر78کھرب27ارب38کروڑ46لاکھ روپے ہوگئی۔ جمعرات کو 22کروڑ70لاکھ 22ہزار شیئرز کا کاروبار ہوا جوبدھ کی نسبت7کروڑ80لاکھ 5ہزار شیئرز کم ہے۔قیمتوں میں اتار چڑھاؤ کے اعتبار سے رفحان میظ کے بھاؤ میں 145روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے رفحان میظ کے حصص کی قیمت بڑھ کر 7200روپے ہو گئی اسی طرح130روپے کے اضافے سے نیسلے کے حصص کی قیمت8080روپے پر جا پہنچی تاہم سیپ ہائرٹیکس اورفلپ موریس کے حصص کی قیمتوں میں بالترتیب 55.19روپے اور 44.95 کی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے بعدسیپ ہائرٹیکس کے حصص کی قیمت کم ہو کر1048.81روپے اور فلپ موریس کے حصص کی قیمت2450روپے ہو گئی۔

نمایاں کاروباری سرگرمیوں کے لحاظ سے یونٹی فوڈز،،ٹی آر جی پاک،فوجی فوڈز،بینک آف پنجاب،پاک الیکٹران،کوئس فوڈ،ایونشن لمیٹیڈ،پاور سیمنٹ اور،میپل لیف کے شیئرز سرفہرست رہے۔ انٹر مارکیٹ میں پاکستانی روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالرکی قدر 3پیسے بڑھ گئی جب کہ اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت مستحکم رہی۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کے مطابق جمعرات کوانٹربینک مارکیٹ میں روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالرکی قدر میں 3پیسے کا اضافہ ہوا جس کے نتیجے میں امریکی ڈالر کی قیمت خرید154.95روپے سے بڑھ کر154.98روپے اورقیمت فروخت155.05روپے سے بڑھ کر155.08روپے ہوگئی جب کہ اوپن مارکیٹ میں امریکی ڈالرکی قیمت خرید154.40روپے اور قیمت فروخت154.70روپے مستحکم رہی۔

دیگر کرنسیوں میں یوروکی قیمت خرید80پیسے کے اضافے سے170.20روپے سے بڑھ کر171روپے اورقیمت فروخت 1.10روپے کے اضافے سے171.70روپے سے بڑھ کر172.80روپے ہوگئی جب کہ برطانوی پاؤنڈکی قیمت خرید202روپے برقرار رہی اورقیمت فروخت203.80روپے سے بڑھ کر204روپے ہوگئی۔فاریکس رپورٹ کے مطابق سعودی ریال کی قیمت خرید40.95روپے برقرار رہی اورقیمت فروخت 41.20روپے سے بڑھ کر41.25روپے ہوگئی جبکہ یواے ای درہم کی قیمت خرید41.95روپے اورقیمت فروخت42.25روپے مستحکم رہی۔ چینی یوآن کی قیمت خرید22روپے اور قیمت فروخت 22.90روپے برقرار رہی۔ بین الاقوامی مارکیٹ میں گزشتہ روز فی اونس سونے کی قیمت میں 10ڈالر کا اضافہ ہوا جس کے باعث مقامی مارکیٹ میں بھی فی تولہ سونا 150روپے مہنگا ہوگیا۔

آل کراچی صراف اینڈجیولرزایسوسی ایشن کے مطابق جمعرات کوبین الاقوامی گولڈ مارکیٹ میں فی اونس سونے کی قیمت10ڈالر کے اضافے سے بڑھ کر1476ڈالر ہوگئی جس کے سبب کراچی،حیدرآباد، سکھر، ملتان، فیصل آباد، لاہور، اسلام آباد، راولپنڈی، پشاور اور کوئٹہ کی صرافہ مارکیٹوں میں فی تولہ سونے کی قیمت150روپے کے اضافے سے 84550روپے اوردس گرام سونے کی قیمت129روپے کے اضافے سے72488روپے ہوگئی۔چاندی کی فی تولہ قیمت بھی 980روپے اوردس گرام اورچاندی کی قیمت 840.20روپے پرمستحکم رہی۔