طاقتوروں کا طعنہ کسی اور کو دیں۔۔۔!!! وکلاء کے حملے کے بعد کوئی سوموٹو لیا جائے گا؟ اب وکلاء کے ساتھ کیا ہونے والا ہے؟ حکومت اور عدلیہ کا اصل امتحان شروع

لاہور( نیوز ڈیسک) سینئر اینکر پراسن عمران خان کا کہنا ہے کہ اول تو وکلاء کے ہسپتال پر حملے کے بعد کوئی سو موٹو ہوگا نہیں اور اگر ہوا بھی تو وکلاء کبھی گنہگار ثابت نہیں کئے جا سکیں گے،وزیر اعظم طاقتوروں کا طعنہ کسی اور کو دیں۔

تفصیلات کے مطابق پی آئی سی حملے کے بعد پورے ملک کی جانب سے وکلاء گردی کی شدید الفاظ میں مذمت کی جا رہی ہے، ایسے میں سینئر اینکر پراسن عمران خان بھی میدان میں آگئے اور حیران کُن رد عمل دے دیا، سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں عمران خان کا کہنا تھا کہ ’’اول تو وکلاء کے ہسپتال پر حملے کے بعد کوئی سو موٹو ہوگا نہیں اور اگر ہوا بھی تو وکلاء کبھی گنہگار ثابت نہیں کئے جا سکیں گے۔وزیر اعظم طاقتوروں کا طعنہ کسی اور کو دیں ‘‘۔

ایک اور پیغام میں عمران خان کا کہنا تھا کہ ’’تمام سائلین اور اداروں کو تب تک عدالتی بائیکاٹ کرنا چاہیے۔ جبتک وکلاء کے تشدد کا مکمل سد باب نہیں ہوجاتا۔ کیس تو خیر چلتے رہیں گے شائد کبھی انصاف بھی مل جائے مگر اپنی جان اور عزت کی حفاظت آپکا حق ہے‘‘۔

ایک اور پیغام میں انہوں نے کہا کہ ’’ آج عدلیہ اور حکومت کا کڑا امتحان تھا ابھی تک تو ناکام نظر آتے ہیں‘‘۔