مولانا جی ! بس 11 دنوں میں ہی بس ہوگئی۔۔۔!!! استعفیٰ، نئے انتخابات، اسلام خطرے میں، تحفظ ناموس رسالتﷺ، کشمیر کو بیچ دیا گیا، یہ سب اچانک کہاں چلا گیا؟ دھرنا ختم کرنے پر ارشاد بھٹی نے مولانا فضل الرحمان کو آڑھے ہاتھوں لے لیا

اسلام آباد( نیوز ڈیسک) مولانا فضل الرحمان نے 2 ہفتوں سے جاری دھرنے کے حوالے سے آج اہم فیصلہ کیا، دھرنے کے پلان بی کا اعلان کیا اور اپنے دھرنے کو شہر اقتدار سے گلی گلی کوچے کوچے منتقل کرنے کا اعلان بھی کر دیا، مولانا فضل الرحمان کے اس اعلان پر سینئر اینکر پرسن ارشاد بھٹی بھی

میدان میں آگئے۔ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک پیغام میں ارشاد بھٹی کا کہنا تھا کہ ’’ مولانا جی اکیلےنہ جانا ہمیں چھوڑکر۔۔۔مولاناجی بس11دن میں ہی بس ہوگئی، استعفٰی،نئےالیکشن،اسلام خطرےمیں، تحفظِ ناموسِ رسالت خطرے میں،یہودی ایجنٹ کی حکومت،اسرائیل کوتسلیم کیاجارہا،کشمیربیچ دیاگیا،کہاں گیا یہ سب کچھ،مولاناجی اورنہیں کم ازکم نوازشریف کی لندن رخصتی کاہی انتظارکرلیتے۔۔‘‘۔

واضح رہے کہ آج مولانا فضل الرحمان نے اسلام آباد دھرنا ختم کرنے کا اعلان کر دیا، سربراہ جے یو آئی ف کا کہنا ہے کہ پلان بی کے تحت ہمارے کارکن صوبوں میں سڑکوں پر نکل آئے ہیں، انہیں پیغام دینا چاہتے ہیں کہ آپ کی مدد کیلئے ہم یہاں سے روانہ ہونے والے ہیں۔ جمیعت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے اسلام آباد دھرنا ختم کرتے ہوئے اسے پورے ملک تک پھیلانے کا اعلان کیا ہے۔مولانافضل الرحمان نے پلان بی کے تحت نئے محاذ پر جانے کا اعلان کیا ہے۔ مولانا فضل الرحمان نے اسلام آباد دھرنے کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہماری جانب سے نئےمحاذپرجانے کااعلان کر دیا گیا ہے۔ دوہفتوں سےقومی سطح کااجتماع تسلسل سےہوا۔ہماری قوت یہاں جمع ہےاوروہاں ہمارےساتھی سڑکوں پرنکل آئےہیں۔ اس لیے اپنے ساتھیوں کی مدد کیلئے ہم آج اسلام آباد سے روانہ ہوں گے۔