سال 2019 کی سب سے بڑی تبدیلی۔۔۔!!! عثمان بُزدار کی جگہ کسے وزیر اعلیٰ پنجاب بنایا جارہا ہے؟ پنجابیوں کو سرپرائز دے دیا گیا

لاہور (نیوز ڈیسک ) معورف صحافی مبشر لقمان نے دعویٰ کیا ہے کہ پنجاب اسمبلی میں بھی جوڑ توڑ کا سلسلہ جاری ہے، عثمان بُزدار کے خلاف بھی تحریک عدم اعتماد لانے کی تیاریاں کی جارہی ہیں اور یہ عمل زور پکڑتا جارہا ہے، اب اگر دیکھا جائے تو وزیر اعلیٰ پنجاب کی اپنی باڈی لینگوئج

بھی تبدیلی ہوتی جارہی ہے، یو دکھائی دے رہا ہے جیسے عثمان بُزدار کی بتی بجنے والی ہے۔ تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی کا کہنا تھا کہ چند ہفتوں کے اندر اندر وزیر اعلیٰ پنجاب کے خلاف تحریک عدم اعتماد لائی جائے گی اور اس کے بعد وہ تبدیل کر دیئے جائیں گے، پھر نئے وزیر اعلیٰ کا انتخاب کیا جائے گا، نیا وزیر اعلیٰ کسی بھی جماعت کا ہوسکتا ہے اور کابینہ نئی تو ہوگی لیکن اس میں موجود چہرے یہی ہونگے۔
خیال رہے کہ جب سے عمران خان نے پنجاب میں عثمان بُزدار کو بطور وزیر اعلیٰ تعینات کرنے کی منظوری دی ہے تب سے ہی وزیر اعلیٰ پنجاب کو ہٹائے جانے کی خبریں منظر عام پر آہی ہیں، مختلف ذرائع کا یہ کہنا ہے وزیر اعظم عمران خان بھی وزیر اعلیٰ پنجاب کی کارکردگی سے خوش نہیں ہے یہی وجہ ہے کہ وہ انکو تبدیل کرنا چاہتے ہیں، بعض ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے عثمان بُزدار کے پیچھے خاتون اول بشریٰ بی بی کا ہاتھ ہے اس لیے وزیر اعظم عمران خان چاہ کر بھی انہیں تبدیل نہیں کر سکتے، یہ خبریں بھی سامنے آئیں تھی حکومتی جماعت کے اتحادی جماعت کے اہم رہنماء چوہدری پرویز الٰہی کو وزیر اعلیٰ پنجاب بنائے جانے کی بھی کوششیں ہورہی ہیں جبکہ سیاسی مبصرین کی بھی یہی رائے ہے کہ اب وزیر اعظم عمران خان چوہدری پرویز الٰہی کو وزیر اعلیٰ پنجاب بنا دیں کیونکہ پرویز الٰہی کو بطور وزیر اعلیٰ پنجاب کام کرنے کا تجربہ ہے وہ عثمان بُزدار کی نسبت بہتر انداز میں پرفارم کر سکیں گے۔