اس ملک کا اللہ ہی حافظ ہو۔۔۔!!! عمران خان کے قریبی ساتھی ’انیل مسرت ‘ کی منموہن سنگھ کے ساتھ سیلفی لینے کی کوشش، پھر سابق بھارتی وزیر اعظم نے کر دیا؟ ویڈیو نے سوشل میڈیا پر تہلکہ مچا دیا

لاہور( مانیٹرنگ ڈیسک) عمران خان کے قریبی ساتھی انیل مسرت نے سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ کے ساتھ بغلگیر ہونے کی کوشش کی، اور ساتھ ہی ہی سیلفی لینے کی بھی کوشش کی تاہم منموہن سنگھ کی جانب سے انیل مسرت کو پیچھے دھکیل دیا گیا۔ جس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوچکی ہے۔


انیل مسرت اور منموہن سنگھ کی ویڈیو پر تبصرہ کرتے ہوئے سلیم صافی نے کہا کہ ’’انیل مسرت کا گھر بھارتی شخصیات کے ساتھ تصویروں سے بھرا پڑا ہے۔ ان کے ہاں برطانیہ میں پاکستانیوں سے زیادہ انڈین نظر آتے ہیں لیکن پھر بھی وہ بھارتیوں کے ساتھ سلفیوں سے سیر نہیں ہوئے۔ اب یہ شخص ہر وقت ہمارے وزیراعظم کے دائیں بائیں ہی رہتے ہیں۔ اللہ اس ملک کا محافظ ہو‘‘۔

ایک اور صارف نے طلحٰہ غوری نے اسی ویڈیو پر ردل عمل دیتے ہوئے لکھا کہ’’وزیراعظم پاکستان کے قریبی دوست انیل مسرت نے سابق بھارتی وزیراعظم کے ساتھ سیلفی بنانا چاہی من موہن سنگھ کے گارڈز نے پیچھے دھکیل دیا‘‘۔

ملائیکہ خان نامی صار ف نے ویڈیو پر رد عمل دیتے ہوئے کہا کہ ’’کہتے ہیں کہ انیل مسرت جس سے ملتا ہے اس کیساتھ تصویر ضرور بناتا ہے۔۔مگر اسکو من موہن سنگھ نے اوقات دکھا دی‘‘۔

بلال بادی لائلپوری نامی صارف کا کہنا تھا کہ ’’یہ اوقات ہے انیل مسرت کی کہ بھارت کا سابق وزیر اعظم اس کے ساتھ تصویر نہیں بناتااور پاکستان کا سلیکٹڈ وزیراعظم ایک غیر ملکی کو کابینہ کی میٹنگز میں بٹھاتا ہےجہاں پاکستان کے اندرونی بیرونی معاملات زیر غور آتے ہیں ‘‘۔

عالمگیر خان مشوانی نامی صارف کا کہنا تھا کہ ’’عمران خان کے قریبی دوست انیل مسرت کو بھارتی سیکورٹی اہلکاروں نے ذلیل کرکے بھگادیا‘‘۔