فضل الرحمٰن تیار ہیں تومیں اپنی جیتی ہوئی نشست چھوڑتا ہوں ۔۔۔ علی امین گنڈاپورنے مولانا کو پھر انتخابی میدان میں اترنے کا چیلنج کر دیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) وفاقی وزیرعلی امین گنڈاپور نے مولانا فضل الرحمان کے ایک بار پھر انتخابی میدان میں اترنے کا چیلنج دیدیا،علی امین گنڈاپور نے کہا ہے کہ مولانا تیار ہوں تومیں اپنی جیتی ہوئی نشست چھوڑتاہوں ،مولانا کو چیلنج ہے وہ الیکشن جیت کر دکھائیں۔ نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کے مطابق

وفاقی وزیرعلی امین گنڈاپور نے مولانا فضل الرحمان کے حلقے میں جلسہ کرنے کا اعلان کردیا،علی امین گنڈاپور نے کہا کہ مولانا کے حلقے میں دگنی عوامی طاقت کا مظاہرہ کروں گا،انہوں نے کہا کہ جوشخص اپنی نشست ہار گیا وہ کس منہ سے وزیراعظم کا استعفیٰ مانگ رہا ہے ۔علی امین گنڈاپور نے مولانا کو ایک بارپھر انتخابی میدان میں اترنے کا چیلنج دیتے ہوئے کہا کہ مولاناتیارہیں میں اپنی جیتی ہوئی نشست چھوڑتاہوں ،مولانا کو چیلنج ہے وہ الیکشن جیت کردکھائیں،علی امین گنڈاپور نے کہا کہ مولاناچاہیں تو ہر پولنگ سٹیشن میں کیمرے لگاکر انتخابات لڑلیں ،انہوں نے کہا کہ اداروں پر تنقید کرنا بندکریں ہمت تو چیلنج قبول کریں ،علی امین گنڈاپور نے کہا کہ مولانا کو ایسی عبرتناک شکست دیں گے کہ سازی زندگی یاد رکھیں گے ۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق جامعہ غوثیہ اکبریہ غوری ٹاؤن میں حضرت مفتی محمد لیا قت علی رضوی کے ختم چہلم شریف کے موقع پر سنی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے تحریک لبیک یا رسول اللہ صلی اللہ علیک وسلم کے سربراہ ڈاکٹر محمد اشرف آصف جلالی نے کہا کہ پاکستانی ادارے ملا،مودی اتحاد کے پاکستانی ونگ کو ریاست پاکستان میں کھلی چھٹی نہ دیں۔مسئلہ کشمیر کو دفن کرنے میں حکمران اور فضل الرحمن برار کے شریک ہیں۔بھارت کیساتھ نظریاتی قرب رکھنے والے لیڈر کا پاکستان کے دار الحکومت کے قریب مورچہ زن ہو جانا خطرے سے خالی نہیں۔بھارت کے آرٹیکل370ختم کرکے کشمیر پر قبضہ کر لینے کو پاکستان کے فاٹا کو ساتھ ملانے کے ساتھ تشبیہ دینے والی سوچ اور کشمیر کے مسلمانوں پر کیے جانے والے بھارتی فوج کے مظالم کو پاکستان آرمی کے وزیر ستان میں دہشتگردوں کے خلاف آپریشن ضرب عضب کے ساتھ ملانے والا بیانیہ پاکستان کی سالمیت کیلئے زہر قاتل ہے۔عام انتخابات میں دو فیصد ووٹ لینے والی جماعت کا پاکستان پر حکومت کرنے کا خواب پاکستان کی جمہوریت کیلئے لمحہ فکریہ ہے۔