You are here
Home > پا کستا ن > دھرنا ختم کرانے کا حتمی فیصلہ، آپریشن کا آغاز کب کیا جائے گا؟ رات کے اس پہر بریکنگ نیوز آگئی

دھرنا ختم کرانے کا حتمی فیصلہ، آپریشن کا آغاز کب کیا جائے گا؟ رات کے اس پہر بریکنگ نیوز آگئی

دھرنا ختم کرانے کا حتمی فیصلہ، آپریشن کا آغاز کب کیا جائے گا؟ رات کے اس پہر بریکنگ نیوز آگئی …….. راولپنڈی (مانیٹرنگ ڈیسک) فیض آباد دھرنے کو ختم کروانے کیلئے حتمی آپریشن کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ اور سپریم کورٹ کے احکامات کے بعد وفاقی حکومت نے فیض آباد دھرنے کو ختم کروانے کیلئے حتمی آپریشن کا فیصلہ کر لیا ہے۔ آپریشن کیلئے

وزارت داخلہ نے پولیس کو گرین سگنل دے دیا ہے۔ آپریشن کا آغاز صبح ہوگا۔اس سلسلے میں اسلام آباد اور پنجاب پولیس کی اضافی نفری فیض آباد طلب کر لی گئی ہے۔ جبکہ آپریشن میں ایف سی کے اہلکار بھی شریک ہوں گے۔ آپریشن میں کسی قسم کا اسلحہ استعمال نہ کرتے ہوئے صرف آنسو گیس کے شیل اور ڈنڈوں کے استعمال کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ دھرنا مظاہرین کی گرفتاری کیلئے مختلف ٹیموں کی تشکیل کا کام بھی مکمل کر لیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ اسلام آباد کے علاقے فیض آباد میں مذہبی جماعتوں نے 2 ہفتوں سے زائد سے دھرنا دے رکھا ہے جس کے باعث جڑواں شہروں میں کاروبار زندگی مکمل طور پر مفلوج ہے۔ واضح رہے کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے ضلعی انتظامیہ کو تین روز میں فیض آباد میں دھرنا ختم کرانے کی ایک اور ڈیڈ لائن دے دی ہے۔ عدالتی احکامات پر عمل نہ کرنے پر وفاقی وزیر داخلہ کوشوکا زنوٹس بھی جاری کر دیا گیا۔ ہائیکورٹ کا حکم ملتے ہی ضلعی انتظامیہ میں حرکت میں آتے ہوئے دھرنا قائدین کو آخری وارننگ جاری کرتے ہوئے انھیں آج رات 12 بجے تک فیض آباد کو خالی کرنے کا حکم دیدیا ہے۔ ضلعی انتظامیہ کی جانب سے جاری آخری وارننگ میں کہا گیا ہے کہ پہلے بھی تین وارننگ نوٹسز جاری ہو چکے ہیں لیکن دھرنے کے شرکا گزشتہ دو ہفتے سے غیر قانونی طور پر فیض آباد بیٹھے ہیں اور مسلسل قانون کی خلاف ورزی کر رہے ہیں۔ضلعی انتظامیہ کی جانب سے وارننگ نوٹس میں کہا گیا ہے کہ ہائیکورٹ کے حکم پر فیض آباد کے قریب پریڈ گراؤنڈ جلسے جلوس کیلئے مختص ہے۔ اگر آج ہفتے کی رات 12 بجے تک فیض آباد خالی نہ کیا گیا تو ایکشن ہو گا۔ وارننگ آپریشن کی صورت میں تمام تر ذمہ داری دھرنے کے قائدین اور شرکا پر ہو گی۔


Top