بریکنگ نیوز: پاک فوج کا بڑا آپریشن ۔۔۔۔ بڑی تعداد میں بھارتی فوجیوں کو جہنم واصل کر دیا گیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) پاکستانی حکام نے دعویٰ کیا ہے کہ انڈیا کی جانب سے لائن آف کنٹرول کے قریب وادی نیلم میں فائرنگ کے سبب کم از کم تین شہری اور ایک پاکستانی فوجی ہلاک جبکہ دو فوجیوں سمیت سات افراد زخمی ہوگئے ہیں۔پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقاتِ عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق انڈین فورسز

بی بی سی کی ایک خصوصی رپورٹ کے مطابق۔۔۔۔ نے شاہ کوٹ، جڑا اور نوسیری سیکٹر میں دانستہ طور پر شہری آبادیوں کو نشانہ بنایا۔انڈین حکومت کے پانچ اگست کے اقدامات کے بعد سے دونوں ممالک کے درمیان تناؤ میں اضافہ ہوا ہے اور فائرنگ کا تبادلہ بھی ہوا ہے۔اگست سے اب تک ایل او سی پر دونوں اطراف کی مجموعی ہلاکتوں کی یہ سب سے بڑی تعداد ہے۔ میجر جنرل آصف غفور نے اپنی ٹویٹ میں بتایا کہ پاکستانی فوج کی جوابی کارروائی میں نو انڈین فوجی ہلاک اور کئی زخمی ہوئے، جبکہ دو انڈین بنکرز بھی تباہ کر دیے گئے۔ادھر خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق انڈین حکام کا کہنا ہے کہ دو فوجیوں اور ایک عام شہری ایل او سی پر فائرنگ سے ہلاک ہوئے ہیں۔ انڈین آرمی کے ترجمان کرنل راجیش کالیا نے دعویٰ کیا ہے کہ پاکستان کی جانب سے تنگدھار سیکٹر میں جنگ بندی کی خلاف ورزی کی گئی جس پر ان کی افواج نے جوابی کارروائی کی۔ انڈیا کی جانب سے رواں سال پانچ اگست کو اس کے زیرِ انتظام کشمیر کی خصوصی حیثیت کے ختم کر دی گئی تھی اور وہاں کرفیو نافذ کردیا گیا تھا۔گذشتہ ہفتے انڈیا کے زیر انتظام کشمیر کی خصوصی حیثیت کے خاتمے کے تقریباً 70 دنوں کے بعد موبائل ٹیلیفون سروسز جزوی طور بحال کر دی گئی ہیں لیکن ابھی بھی انٹرنیٹ سرو‎سز معطل ہیں۔پاکستان اور انڈیا کے درمیان اس سال کے اوائل میں تناؤ اس وقت عروج پر پہنچ گیا تھا جب انڈیا کی جانب سے 26 فروری کو پاکستان کے علاقے بالاکوٹ میں ’دہشتگردوں کے تربیتی کیمپ‘ کو نشانہ بنانے کا الزام عائد کیا گیا تھا۔پاکستان نے اس دعوے کی تردید کی تھی۔اس کے اگلے دن 27 فروری کو پاکستان نے اپنی حدود میں آنے والے انڈین ایئرفورس کے ایک مگ 21 طیارے کو مار گرایا تھا اور اس کے پائلٹ ابھینندن کو حراست میں لے لیا تھا جنھیں بعد میں رہا کر دیا گیا۔پاک فوج کی جوابی کارروائی میں 9 بھارتی فوجی اور 2 بنکر تباہ ہو چکے ہیں ،