بڑی خوشخبری: 50ارب ڈالرکی رکی ہوئی سرمایہ کاری بحال ۔۔۔ عمران خان غضب کی چال چل گئے

اسلام آباد (ویب ڈیسک) سابق چیئرمین آل پاکستان شپنگ ایسویسی ایشن عاصم عظیم صدیقی نے کہا ہے کہ وزیراعظم کے دورہ چین سے50ارب ڈالرکی رکی ہوئی سرمایہ کاری بحال ہونے کا امکان پیدا ہو گیا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ اب چین کی جانب سے گوادرپورٹ پر کنسٹریشن شروع ہوجائے گی

اورچائنیزکی فری زون میں سرمایہ کاری بھی شروع ہوجائے گی، انہوں نے مزید کہاکہ اب نئی انڈسٹریاں قائم ہوں گی کیونکہ جب انڈسٹری لگ جاتی ہے تواس منسلک دیگرانڈسٹریاں بھی قائم ہوجاتی ہے جس سے لوگوں کو زیادہ سے زیادہ روزگارملے گااورحکومت کومحصولات بھی ملنا شروع ہوجائیں گے۔سابق چیئرمین نے کہا کہ حکومت کی جانب اٹھائے جانے والے ان اقدامات کے باعث محسوس ہوررہاہے کہ سی پیک کا منصوبہ تیزی سے مکمل ہوجائے گااورملکی معیشت بہترہوجائے گی۔انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں صدرِپاکستان کی جانب سے ایک آرڈینینس جاری کردیاگیاہے جس کے تحت گوادر پورٹ کے ذریعےدرآمدہونے والی مختلف اشیاءکے کنسائمنٹس پر ڈیوٹی وٹیکسوں کی مکمل چھوٹ دیدی گئی ہے بالکل اسی طرح جیسے کہ ایکیسپورٹ پروسیسنگ زون کا اسٹیٹس تھااوراب ہمیں امیدہے کہ اب تیزی سے برآمدی نوعیت کی کمپنیاں گوادرمیں آکرسرمایہ کاری کریں گی اورگوادرمیں نئی صنعتیں لگیں گی جس سے مقامی لوگوں کو روزگارملے گا۔انہوں نے بتایاکہ بلوچستان حکومت کو خدشات تھے کے مقامی لوگوں کوگوادر میں روزگار کی فراہمی نہیں ہوگی لیکن چین نےاس بات کی واضع طورپریقین دہانی کرادی ہے کہ گوادرمیں قائم ہونے والے انڈسٹریوں میں زیادہ سے زیادہ نوکریاں مقامی لوگوں کو ہی فراہم کی جائیں گی جس سے مقامی لوگوں کے حالات بہترہیں گے اورانشاءاللہ کچھ ہی عرصہ میں بلوچستان بلکہ پاکستان کے معاشی حالات میں بھی بہتری آجائے گی۔ والے انڈسٹریوں میں زیادہ سے زیادہ نوکریاں مقامی لوگوں کو ہی فراہم کی جائیں گی جس سے مقامی لوگوں کے حالات بہترہیں گے اورانشاءاللہ کچھ ہی عرصہ میں بلوچستان بلکہ پاکستان کے معاشی حالات میں بھی بہتری آجائے گی۔