جو کہا کر دکھایا۔۔۔! ایک کھرب چھ ارب روپے کی ریکوری، سب سے زیادہ پیسہ کس سے نکلوایا گیا؟ نیب نے دنگ کر ڈالنے والے اعداد و شماز جاری کر دیے

اسلام آباد(ویب ڈیسک) قومی احتساب بیورو (نیب) لاہور نے گزشتہ اڑھائی سالوں کی کارکردگی رپورٹ جاری کردی ہے۔رپورٹ کے مطابق نیب لاہور نے اکتوبر دو ہزار سترہ سے تاحال مجموعی طور پر ایک کھرب چھ ارب روپے کی ریکوری کی ہے جس میں چھ ارب سنتالیس کروڑ روپے سے زائد رقوم کی پلی بارگین شامل ہے۔

نیب لاہور بیورو نے اپنے ادارے کا گزشتہ 17 سال کی کارکردگی کا ریکارڈ توڑتے ہوئے اکتوبر 2017 سے تاحال مجموعی طور پر 1 کھرب 6 ارب روپے کی ریکوری ممکن بنادی ۔ریکوری میں رقوم کی صورت میں ڈائریکٹ اور پراپرٹی و دیگر کی صورت میں انڈائریکٹ ریکوری شامل ہے۔اڑھائی سال کے دوران مجموعی طور پر ہاؤسنگ سیکٹر میں 14 ریفرنس دائر کیے گئے جب کہ زیر تفتیش 62 کیسز میں سے 40 کیسز کو پایہ تکمیل تک پہنچایا گیا۔رپورٹ کے مطابق گزشتہ اڑھائی سال کے دوران غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیوں کے 54304 متاثرین کیلئے کی پلی بارگین ممکن بنائی گئی جب کہ ڈی جی نیب لاہور کی سربراہی میں 26 ارب کی رقوم صرف ہاؤسنگ سیکٹر میں ملزمان سے برآمد کرائی جا چکی ہیں، 51 ارب روپے مالیت کی بلواسطہ ریکوری پر عمل درآمد بھی کرایا جا چکا ہے۔نیب لاہور کی جاری کردہ رپورٹ کے مطابق اکتوبر 2017 سے اگست 2019 کے دوران نیب پراسیکیوشن ونگ نے 32 ارب روپے مالیت پر مشتمل 14 ریفرنسز احتساب عدالتوں میں دائر کیے۔ دوسری جانب مشرنخزانہ عبدالحفظب شخا کا کہنا ہے کہ بڑے خساروں پر قابو پا لاک گاد، حکومت کے اخراجات کا خسارہ36 فصد کم ہوا،وزیر اعظم آفس کا بجٹ کم کاف گای،تجارتی خسارے مںب35 فصدم کمی آئی جبکہ بررونی سرمایہ کاروں کا پاکستان پر اعتماد بڑھا ہے۔تفصلاجت کے مطابق مشروخزانہ عبدالحفظم شخر نے اسلام آباد مںف نولز کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ بڑے خساروں پرقابو پا لاا گاٹ ہے، حکومت کے اخراجات کا خسارہ 36 فصددکم ہوا،8 لاکھ اضافی افراد ٹکسے نٹ مںے آئے،تجارتی خسارے مںس 35فصدگ کمی آئی،وزیر اعظم آفس کا بجٹ کم کاف گال،پہلی سہ ماہی مںر سٹٹم بنک سے کوئی قرض نہںن لاتگا9،تنآ ماہ سے اینجچ ریٹ مستحکم ہوا ہے،ماضی مںک روپہی مستحکم رکھنے کے لےج کئی لاکھ ڈالرز ضائع کےے گئے۔عبدالحفظق شخص کا کہناتھا کہ گزشتہ 3 ماہ مںچ کوئی ضمنی گرانٹ جاری نہںت کی گئی،بررونی سرمایہ کاروں کا پاکستان پر اعتماد بڑھا ہے،سٹاک مارکٹئ مںش سرمایہ کاروں کا اعتماد بحال ہوا ہے اورریونوف مںم16 فصدھ اضافہ ہواہے،کوشش ہے 5 بڑے سکٹر ز کی مدد کی جائے،نان ٹکسس آمدنی مںا 406ارب روپے حاصل کےی،سولنر اخراجات مںل 40 ارب کمی کی،سٹٹ بنکا سے قرض لنےے سے قںت بڑھتی ہں6۔ایف بی آر چئررمن کا کہناتھا کہ اقامہ ہولڈرز کی معلومات عوام سے شئرن کی جائںک گی،یواے ای کے حکام اگلے ماہ پاکستان آرہے ہںہ۔