بڑا سیاسی تہلکہ: مولانا فضل الرحمٰن کے خواب چکنا چور۔۔۔۔ شہباز شریف نے دھرنے کے حوالے سے حیران کن اعلان کر دیا

لاہور(ویب ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر اور قائد حزب اختلاف میاں شہباز شریف نے مولانا فضل الرحمان کے دھرنے میں شامل ہونے کی مخالفت کر دی۔ نجی نیوز چینل کے مطابق مسلم لیگ ن پاکستان کے صدر شہباز شریف کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس مین چھپی اندرونی کہانی سامنے آ گئی۔

شہباز شریف کا کہنا ہے کہ مولانا فضل الرحمان کے دھرنے کی حمایت کرنے کی بجائے ہمیں اپنے احتجاج کا پروگرام الگ سے بنانا چاہئے۔ان کا کہنا تھا کہ میں مولانا فضل الرحمان کی نہایت عزت کرتا ہوں تاہم موجودہ دھرنے اور احتجاج کا کریڈٹ مولانا فضل الرحمان کو جائے گا لہٰذا ہمارا اس میں شرکت کرنا ٹھیک نہیں ہے ۔یاد رہے کہ جمعیت علمائے اسلام (ف) نے آزادی مارچ کی تیاریوں کے ساتھ ساتھ پارٹی ترانہ بھی تیار کرلیا ہے جس کا ٹائٹل ہے ”گو نیازی گو“ کے الفاظ بھی پارٹی ترانے کا حصہ ہیں۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ تحریک انصاف کی طرف سے بھی اپنی سیاسی جلسوں اور دھرنے کے دوران مختلف گلوکاروں کی آواز میں پارٹی ترانے تیار کئے گئے۔ عوام کی جانب سے تحریک انصاف کے پارٹی ترانوں کو ملنے والی پذیرائی کے بعد مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی سمیت دیگر جماعتوں نے بھی خصوصی طور پر پارٹی ترانے تیارکرائے۔ جیسا کہ جے یو آئی (ف) جس نے 27 اکتوبرکواسلام آباد کی طرف آزاد ی مارچ کا اعلان کیا ہے تاہم مولانا فضل الرحمٰن کی ہدایت پر بھی پارٹی ترانہ تیار کیا ہے جس کے بول ہیں۔”فضل الرحمان آ رہا ہے،ایک طوفان لارہا ہے،بن کے بادل چھا رہا ہے،سوچ تو اب کیا رہا ہے،چھوڑ کرسی، چھوڑ کرسی کرکنارا،پھر نہ دیکھیں منہ تمہارا،گو نیازی گو،گو نیازی گو۔ قوم نے ہے مل کر پکارا، اب نہیں ہے کوئی چارہ گونیازی گو، گو نیازی گو“۔ جے یو آئی (ف) کی جانب سے پارٹی ترانے کو سوشل میڈیا پر بھی نشرکیا جا رہا ہے۔