’’خان صاحب مجھے ایک منٹ بھی نہیں لگے گا اور میں۔۔۔۔‘‘ پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں عمران خان کو دوٹوک جواب کس اہم رکن اسمبلی نے دے دیا؟ تہلکہ خیز تفصیلات

اسلام آباد (ویب ڈیسک )پی ٹی آئی پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آگئی۔ اجلاس کے دوران وزیر اعظم نے اسد عمر کو دوبارہ کابینہ میں شامل کرنے کا عندیہ دے دیا ، اجلاس میں رکن اسمبلی نور عالم اور وزیر اعظم کے درمیان نوک جھونک بھی ہوئی۔نجی ٹی وی ہم نیوز نے ذرائع

کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ پی ٹی آئی کی پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس کے دوران وزیر اعظم نے تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی نور عالم خان سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ قومی اسمبلی میں آپ کی تقریر سنی ، جب آپ پی پی میں تھے تو اس وقت حکومت کے خلاف تقریر کیوں نہیں کرتے تھے؟۔نور عالم خان نے وزیر اعظم سے کہا کہ وہ اس وقت بھی حکومت پر تنقید کرتے تھے اور اب بھی حکومت کو آئینہ دکھاتے ہیں، وزرا نہ تو اسمبلی میں آتے ہیں اور نہ ہی اراکین اسمبلی کا کام کرتے ہیں ۔وزیر اعظم عمران خان نے نور عالم خان پر واضح کیا کہ مہنگائی گزشتہ ادوار کی معاشی پالیسیویں کی وجہ سے بڑھی ہے لیکن نور عالم نے اس پر تو کوئی بات نہیں کی، ایسے احساسات اور جذبات کا اطہار پارلیمانی پارٹی کے اندر کیا کریں ، اسمبلی کے فلور پر ایسا بیان دینے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔وزیر اعظم عمران خان نے ارکان اسمبلی کو حلقوں کے مسائل حل کرنے کی یقین دہانی کرادی ۔ حکومتی اراکین اسمبلی جلد وزیر اعظم سے ملاقات کریں گے۔ اجلاس کے دوران وزیر اعظم عمران خان نے سابق وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر کو دوبارہ کابینہ میں شامل کرنے کا عندیہ بھی دے دیا۔خیال رہے کہ تحریک انصاف کے رکن نورعالم خان نے 16 ستمبر کو قومی اسمبلی کے اجلاس میں اپنی ہی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا تھا کھاد دوسو روپے مہنگی ہوگئی ہے،بجلی گیس روٹی کیوں مہنگی کردی گئی ہے، یہاں چینی والوں صنعتکاروں کے لئے آواز اٹھائی جاتی ہے مگرغریب آدمی کے لئے کیوں آواز نہیں اٹھائی جاتی؟۔