چینی، کھاد، تمباکو، سیمنٹ، بیوریجز کی ٹیکس چوری روکنے کیلئے عمران حکومت نے نیا فارمولا تیار کرلیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے چینی، کھاد، تمباکو، سیمنٹ، بیوریجز کی ٹیکس چوری روکنے کے لیے نیٹ ورک قائم کرلیا۔رپورٹ کے مطابق ایف بی آر نے پانچ شعبوں کی مصنوعات جس میں تمباکو ، چینی، کھاد ، سیمنٹ اور بیوریجز شامل ہیں ان کی نگرانی، جانچ پڑتال اور مانیٹرنگ کے لیے ڈی جی انٹیلیجنس

و انویسٹی گیشن آئی آر کی سربراہی میں مشترکہ کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔ایف بی آر نے ان پانچوں شعبوں کی مصنوعات کی غیر قانونی تجارت اور ٹیکس چوری کے خلاف مؤثر کارروائی کے لیے ان لینڈ ریونیو انفورسمنٹ نیٹ ورک بھی قائم کر دیا ہے۔ ایف بی آر کے ذرائع کے مطابق کمیٹی مذکورہ پانچ اشیاء کی ٹیکس چوری ا ور غیر قانونی تجارت روکنے کے لیے روڈ میپ تیار کرے گی اور ان لینڈ ریونیو انفورسمنٹ نیٹ ورک کےذریے ٹیکس چوری روکنے کے لیے اقدامات کرے گی۔ذرائع کے مطابق کمیٹی کے ذریعے غیر قانونی سگریٹ کی تجارت کی مؤثر مانیٹرنگ کی جائے گی اور چینی، کھاد، سیمنٹ اور بیوریجز کی بھی نگرانی کرے گی۔ذرائع کے مطابق لینڈ ریونیو انفورسمنٹ نیٹ ورک متعلقہ فیلڈ فارمیشنز کے ساتھ مل کر کارروائی کرے گا جب کہ پانچوں شعبوں کی مصنوعات کی نقل وحرکت والے روٹس پر انفورسمنٹ اسکواڈ پیٹرولنگ کر ے گا۔تاہم یہ پیٹرولنگ اسکواڈ مصنوعات کی سٹوریج والی جگہوں پر چیکنگ کرے گا اور اشیا ء پر ٹیکس مہر نہ ہونے کی صورت میں قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔یاد رہے اس سے پہلےوزیر اعظم عمران خان نے ملک میں سگریٹ کی غیر قانونی تجارت کا نوٹس لیتے ہوئے کریک ڈاؤن کا حکم دیا تھا۔وزیراعظم ہاؤس کی جانب سے بھیجے گئے مراسلے میں وزارت صحت اور فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے حکام کو ملک گیر کریک ڈاؤن کی ہدایات جاری کی گئی تھیں۔مراسلے میں کہا گیا کہ سگریٹ کی غیرقانونی تجارت سےملکی خزانےکو ٹیکس چوری کی مد میں نقصان ہو رہا ہے اس لیے متعلقہ ادارے ایسے افراد کے خلاف فوری کارروائی کریں۔وزارت صحت اور فیڈرل بورڈآف ریونیو حکام کو اپنی ماہانہ کارکردگی رپورٹ وزیراعظم آفس میں جمع کرانےکا بھی حکم دیا گیا ہے