’’ جاگدے رہناں، ساڈے تے نہ رہناں۔۔۔‘‘ ایسی کیا نوبت آگئی کہ فردوس عاشق اعوان کو یہ ٹویٹ کرنا پڑ گیا، جان کر آپ بھی ہنس دیں گے

اسلام آباد (ویب ڈیسک)مشیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہاہے کہ مولانا فضل الرحمان صاحب بلاول کے بیان کا مطلب ہے کہ ”جاگدے رہنا ، ساڈے تے نہ رہنا“۔اپنے ایک ٹوئٹ میں فردوس عاشق اعوان نے مولانا فضل الرحمان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ مولانا فضل الرحمان صاحب بلاول کے بیان کا مطلب ہے

کہ ”جاگدے رہنا ، ساڈے تے نہ رہنا“۔ انہوں نے کہا کہ بلاول چاہتے ہیںکہ دھرنا مولانا فضل الرحمان اور مدارس کے بچے دیں اور وہ بلٹ پروف گاڑی سے اتر کر کرسی پر بیٹھ جائیں۔انہوں نے کہا کہ پہلے دن سے کہا تھا کہ اپوزیشن آپس میں سیاست کررہی ہے پہلے ہی کہا تھا کہ اپوزیشن کوخود اپوزیشن سے خطرہ ہے ۔ مال بچاﺅ پارٹیاں مولانا صاحب کو قربانی کا بکرا بنانے کی سازش کررہی ہیں۔فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ بلاول صاحب کراچی کا دورہ کرکے کچرے کی صفائی پر توجہ دیں، بدقسمتی سے وسائل سندھ کے غریب عوام تک نہیں پہنچ رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ جب تک پیپلز پارٹی سندھ پر مسلط ہے ، عوام کا بھلا ممکن نہیں ہے ۔ کہ ”جاگدے رہنا ، ساڈے تے نہ رہنا“۔ انہوں نے کہا کہ بلاول چاہتے ہیںکہ دھرنا مولانا فضل الرحمان اور مدارس کے بچے دیں اور وہ بلٹ پروف گاڑی سے اتر کر کرسی پر بیٹھ جائیں۔انہوں نے کہا کہ پہلے دن سے کہا تھا کہ اپوزیشن آپس میں سیاست کررہی ہے پہلے ہی کہا تھا کہ اپوزیشن کوخود اپوزیشن سے خطرہ ہے ۔ مال بچاﺅ پارٹیاں مولانا صاحب کو قربانی کا بکرا بنانے کی سازش کررہی ہیں۔فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ بلاول صاحب کراچی کا دورہ کرکے کچرے کی صفائی پر توجہ دیں، بدقسمتی سے وسائل سندھ کے غریب عوام تک نہیں پہنچ رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ جب تک پیپلز پارٹی سندھ پر مسلط ہے ، عوام کا بھلا ممکن نہیں ہے ۔