مسافروں کے لیے سرپرائز۔۔۔ پابندی عائد، کراچی ائیر پورٹ پر بڑا قدم اُٹھا لیا گیا

کراچی (نیوز ڈیسک ) کراچی ائیرپورٹ پر سگریٹ ، پان ، نسوار کا گُٹکا کھانے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق سول ایوی ایشن حکام کی جانب سے کراچی ائیرپورٹ کے ملازمین کو ایک حکم نامہ جاری کیا گیا جس میں کراچی ائیر پورٹ پر سگریٹ ، پان ، نسوار اور گٹکے کے
استعمال پر پابندی عائد کر دی گئی۔ اس حوالے سے ائیرپورٹ ملازمین کو تنبیہہ جاری کی گئی ہے کہ پابندی کے فیصلے کا اطلاق ائیرپورٹ کے تمام عملے پر بھی ہوگا اور اگر کوئی پان، نسوار اور گٹکا استعمال کرتے ہوئے پکڑا گیا تو اس کے خلاف ایکشن لے کر سخت کارروائی کی جائے گی۔ذرائع نے بتایا کہ کراچی ائیرپورٹ پر سالانہ 12 ملین مسافروں کی آمدرفت کی سہولت موجود ہے۔ جناح انٹرنیشنل ائیرپورٹ پاکستان کی قومی ائیرلائن سمیت نجی فضائی کمپنیوں کا بھی مرکز ہے جہاں انجینئرنگ کے شعبوں سمیت دیگر کئی اور شعبے بھی موجود ہیں۔یاد رہےکہ اس سے قبل پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی نے پروازوں میں نسوار لے جانے پر پابندی عائد کی تھی۔یکم جولائی 2019ء کو سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے جاری نوٹی فکیشن میں کہا گیا کہ پروازوں میں نسوار لے جانا ممنوع ہے اور کسی بھی پرواز میں نسوار لے کر جانا جُرم قرار دیا جائے گا۔ یہ پابندی عازمین حج پر بھی عائد کی گئی ہے۔ نسوار لے جاتے ہوئے پکڑے گئے کسی بھی مسافر کو قانونی چارہ جوئی کا سامنا کرنا پڑے گا۔ اس ضمن میں پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی اور ائیرپورٹ سکیورٹی فورس نے تمام ائیرپورٹس پر جگہ جگہ بینرز بھی آویزاں کر دئے تھے۔جس میں مسافروں کو نسوار سے متعلق تنبیہہ کرتے ہوئے نئی پابندی کے بارے میں آگاہی دی گئی تھی۔ تاہم اب سول ایوی ایشن حکام کی جانب سے ائیرپورٹ میں سگریٹ ، نسوار، پان اور گُٹکے کے استعمال پر پابندی عائد کر دی گئی ہے جس کا نوٹی فکیشن بھی جاری کر دیا گیا ہے۔