اسمگل شدہ سستے سیگریٹ پینے والے افراد کے لیے بُری خبر: حکومت نے اب تک کا سخت ترین حکم جاری کر دیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک ) اسلام آباد کی سپر مارکیٹ سے سمگل شدہ اور جعلی سگریٹ کے خلاف ہنگامی بنیادوں پر کارروائی کا آغاز کر دیا گیا۔ ڈپٹی کمشنر اسلام آباد حمزہ شفقات کی سربراہی میں ڈائریکٹر ایکسائز ساجد بلال اور انسپکٹر صاحبان نے سپر مارکیٹ کے بڑے سٹور اور دوکانوں کو چیک کیا

اور سمگل شدہ سگریٹ قبضے میں لے کر ضابطہ کی کارروائی عمل میں لائی گئی۔ضلعی انتظامیہ کے جاری بیان کے مطابق ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ ہم شہریوں کی جان و مال کے تحفظ کے ساتھ ان کے لئے خرابی صحت بننے والے عناصر کو ختم کرنے کے لئے دن رات کوشاں ہیں۔ محرم الحرام میں جہاں ہماری تمام کاوشیں امن وآمان بحال رکھنے میں مرکوز ہیں وہاں ایک لاکھ ساٹھ ہزار افراد کی سالانہ موت کا باعث بننے والا عنصر یعنی تمباکو نوشی کا تدارک بھی ہمارے فرائض میں شامل ہے۔ڈاکٹر آصف رحیم اے ڈی سی جی اور ساجد بلال ڈائر یکٹر ایکسائز نے اس عمل کی نگرانی کی۔ ان کا کہنا تھا کہ تمباکو بیچنے کو لائسنس سے مشروط کرنا اچھا قدم ہے۔ اس سے کم عمر نوجوانوں کو سگریٹ کی فروخت میں نمایاں کمی ہوئی ہے۔ سموک فری اسلام آباد وزارت قومی صحت کا پراجیکٹ ہے۔ اس کی کاوشوں کو بین الاقوامی ادارہ صحت کے تمباکو کنٹرول سیکریٹریٹ نے رواں سال کی بہترین سٹریٹجی قرار دیا ہے۔ پراجیکٹ ڈائریکٹر ڈاکٹر منہاج السراج کا کہنا ہے کہ ہماری تمام تر نظریں آنے والی نسلوں کو۔ کینسر اور دیگر مہلک بیماریوں سے بچانے پر لگی ہیں۔وزارت قومی صحت کا پراجیکٹ ہے۔ اس کی کاوشوں کو بین الاقوامی ادارہ صحت کے تمباکو کنٹرول سیکریٹریٹ نے رواں سال کی بہترین سٹریٹجی قرار دیا ہے۔ پراجیکٹ ڈائریکٹر ڈاکٹر منہاج السراج کا کہنا ہے کہ ہماری تمام تر نظریں آنے والی نسلوں کو۔ کینسر اور دیگر مہلک بیماریوں سے بچانے پر لگی ہیں