’’ ابھی تو حفیظ شیخ تنے صرف 2 گنیدیں کھیلی ہیں، سینچری باقی ہے۔۔۔ ‘‘ آئندہ 2 سے 4 ماہ میں پاکستان میں کتنی مہنگائی ہونےوالی ہے؟ اسد عمر نے بتا دیا

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) سابق وزیر خزانہ اسد عمر کا کہنا ہے کہ آئندہ دو سے چار ماہ میں مہنگائی مزید بڑھے گی۔میڈیا رپورٹس کے مطابق اسد عمر کا نجی ٹی کے ساتھ گفتگو میں کہنا تھا کہ وزیر خزانہ کی حیثیت سے وزیراعظم عمران کو مختلف آپشنز سے آگاہ کیا تھا۔

ایک آپشن آئی ایم ایف پروگرام میں نہ جانے کا تھا مگر تمام ماہرین کی رائے تھی کہ ہمیں آئی ایم ایف کے پاس جانا تھا۔عمران خان ٹیم کے کپتان ہیں۔انہیں لگا کہ ایسے بیٹسمین کو بھیجا جائے جو سنچریاں بنائے۔ابھی تو حفیظ شیخ نے صرف دو گیندیں کھیلی ہیں۔سابق وزیر خزانہ نے مزید کہا کہ عمران خان کو پتہ ہے کہ اسد عمر کابینہ میں ہو یا نہ ہو تحریک انصاف کی ٹیم کا حصہ لازمی ہے۔مہنگائی سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آئندہ دو سے چار ماہ میں مہنگائی میں مزید اضافہ ہو گا اور پھر مہنگائی میں کمی واقع ہو گی۔انہوں نے مزید کہا کہ چینی کی قیمتوں میں تیزی سے اضافے کی وجوہات جاننے کے لیے تحقیقات ہو رہی ہیں۔اسد عمر نے کہا کہ مسابقتی کمیشن کو کہا ہے کہ چینی سمیت 5 چیزوں کی قیمتوں میں اضافے کا جائزہ لیا جائے۔جب کہ دوسری جانب سابق وفاقی وزیر خزانہ اسد عمرنے تحریک انصاف چھوڑنے کی خبروں کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ میڈیا کی خواہش ہے کہ میں پاکستان تحریکِ انصاف چھوڑ دوں۔انہوں نے ایک صحافی کی جانب سے تحریکِ انصاف چھوڑنے کے سوال پر کہا کہ یہ آپ کی یا کسی اور کی خواہش تو ہو سکتی ہے کہ میں پی ٹی آئی چھوڑ دوں لیکن میری ایسی خواہش نہیں ہے۔اسد عمر کا کہنا ہے کہپی ٹی آئی چھوڑنے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں۔ انہوں نے کہا کہ میری پی ٹی آئی چھوڑنے کی خبر کا میرے علاوہ سب کو علم ہے۔واضح رہے وزیراعظم عمران خان نے وفاقی کابینہ میں ناقص کارکردگی کی بنیاد پر بڑے پیمانے پر اکھاڑ پچھاڑ کی تھی۔ وزیرخزنہ اسد عمر نے اپنی وزارت چھوڑنے کا اعلان کیا اور آئندہ بغیر کسی وزارت کے پارٹی کی سپورٹ جاری رکھنے کا فیصلہ بھی کیا تھا۔