گاڑیوں کے بعد موٹرسائیکل اور رکشہ ڈرائیوروں کی شامت آگئی۔۔۔ حکومت نے ایسا ٹیکس عائد کرنے کا فیصلہ کر لیا کہ شہری سر پکڑ کر بیٹھ گئے

کراچی( ویب ڈیسک ) وفاقی حکومت نے موٹر سائیکل اور رکشے پر ودہولڈنگ ٹیکس لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔ موٹرسائیکل کی رجسٹریشن فیس 17 ہزار‘رکشے کی 7 ہزار روپے بڑھ جائیگی، فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے محکمہ ایکسائز سندھ کو ٹیکس کی وصولی کیلئے خط لکھا ہے جس کے مطابق ود ہولڈنگ ٹیکس

لگنے کے بعد موٹر سائیکل کی رجسٹریشن میں 17 ہزار روپے کا اضافہ ہوگا۔خط میں کہا گیا ہے کہ اِس وقت موٹر سائیکل کی رجسٹریشن فیس 3 ہزار 400 روپے ہے اور ودہولڈنگ ٹیکس کے بعد رجسٹریشن فیس 20 ہزار 900 روپے ہو جائے گی۔خط کے مطابق ود ہولڈنگ ٹیکس کے بعد رکشے کی رجسٹریشن میں بھی 7 ہزار روپے کا اضافہ ہوجائے گا اور رکشے کی رجسٹریشن 3 ہزار 100 روپے سے بڑھ کر 10 ہزار 750 روپے ہو جائے گی۔یاد رہے کہ ایف بی آر نے کراچی کیلئے جائیداد کی نئی قیمت کا تعین کرلیا ہے جس کے تحت جائیدادوں کی قیمت میں 66 فیصد تک اضافہ ہوا ہے۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق ایف بی آر کے پانچ سینئر عہدیداروں نے مختلف شہروں میں نئی ذمہ داریاں سنبھال لیں۔ بدھ کی شام پانچ الگ الگ نوٹیفکیشن ایف بی آر کے سیکرٹری مینجمنٹ کے دستخطوں سے جاری کر دیئے گئے ہیں۔ نوٹیفکیشن نمبر1866۔آئی آر/2019 کے مطابق ان لینڈ ریونیو سروس کے بنیادی سکیل 20 کے عہدیدار اردشیر سلیم طارق نے کمشنر آئی آر(ٹیکس بنیاد کی وسعت) کا عہدہ چھوڑ کر چیف انفارمیشن ٹیکنالوجی ایف بی آر اسلام آباد کا حساس عہدہ سنبھال لیا ہے۔ احمد کمال بنیادی سکیل 20 کے آئی آر عہدیدار نے کمشنر آئی آر(اپیلز۔III) کی ذمہ داریوں سے سبکدوش ہو کر ڈائریکٹر آئی آر انٹیلی جنس وانوسٹی گیشن لاہور کی ذمہ داریوں کا چارج لے لیا ہے۔ محمد نوید اختر بنیادی سکیل نمبر20آئی آر کے ڈائریکٹر انٹیلی جنس اینڈ انوسٹی گیشن لاہور نے اپنا چارج دے کر کمشنر آئی آر (اپیلز۔III) کی ذمہ داریاں سنبھال لی ہیں۔