شریف خاندان کے لیے ایک اور مشکل۔۔۔۔ نیب نے مرحوم عباس شریف کے خاندان کے بارے بڑا قدم اُٹھا لیا

لاہور(نیوز ڈیسک ) نیب نے سابق وزیراعطم نوازشریف کے بھتیجے یوسف عباس کو بھی طلب کرلیا، یوسف عباس شریف کو23 جولائی کونیب لاہورمیں پیش ہونے کی ہدایت کی گئی ہے، یوسف عباس سے چوہدری شوگرملزکے حصص کی خریدوفروخت اورمالکان کا ریکارڈ بھی طلب کیا گیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق نیب نے قائد ن

لیگ نوازشریف کے تیسرے بھائی کی اولاد بھی نیب کے ریڈارپر آگئے ہیں۔نیب نےعباس شریف مرحوم کے بیٹے یوسف عباس کوطلب کرلیا۔ یوسف عباس شریف کو23 جولائی کونیب لاہورمیں پیش ہونے کی ہدایت کی گئی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ یوسف عباس سے چوہدری شوگرملزسے متعلق مالی، چوہدری شوگرملزکے حصص کی خریدوفروخت اورمالکان ک اریکارڈ بھی طلب کیا گیا ہے۔ نیب نے ان سوالات کے جوابات بھی طلب کیے کہ درآمد کی گئی چینی کے عوض ملنے والی رقوم کی تفصیلات اورچینی کی قیمت کیسے وصول کی گئی؟ کس کس ملک سے چینی کےعوض کتنے پیسےآئے؟ بتایا گیا کہ شمیم شوگرملزکی انویسٹمنٹ اورقرضوں کی تفصیل بھی نیب نے طلب کرلی ہیں۔عباس شریف سے مختلف اداروں کو دیئے گئے80 کروڑ کے قرض کی تفصیل بھی طلب کرلی ہیں۔ دوسری جانب احتساب عدالت نے سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کے خلاف قومی احتساب بیورو (نیب )کی جانب سے دائر جعلی ٹرسٹ ڈیڈ کی درخواست خارج کردی۔ جمعہ کو احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے مریم نواز کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس میں جعلی ٹرسٹ ڈیڈ پیش کرنے سے متعلق کیس کی سماعت کی۔اس موقع پر ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نیب سردار مظفر عباسی نے عدالت میں دلائل پیش کرتے ہوئے کہا کہ ایون فیلڈ ریفرنس میں ٹرسٹ ڈیڈ جعلی تھی۔ مریم نواز کے وکیل امجد پرویز نے دلائل پیش کرتے ہوئے کہا کہ احتساب عدالت میں درخواست دائر کرنا نیب کا اختیار نہیں تھا بلکہ یہ عدالت کے خصوصی دائرہ اختیار میں آتا ہے اور درخواست دائر کرنے کی 30 روز کی قانونی مدت بھی ختم ہوچکی لہذا نیب کی درخواست کو ناقابل سماعت قرار دیا جائے۔احتساب عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد مریم نواز کے خلاف نیب کی جانب سے دائر جعلی ٹرسٹ ڈیڈ ریفرنس کی درخواست ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے خارج کردی۔ عدالت نے حکم دیا کہ اپیل ہائی کورٹ میں زیر سماعت ہے لہذا مذکورہ درخواست کو ناقابل سماعت قرار دیکر خارج کردیا ہے۔