پاکستانی سیاست میں بڑ ا تہلکہ : جج ارشد ملک کی متنازعہ ویڈیو کاپنجاب سائنس فورنزک لیبارٹری میں ٹیسٹ،ناقابل یقین تفصیلات

اسلام آباد (ویب ڈیسک)جج کی متنازعہ ویڈیو پنجاب سائنس فورنزک لیبارٹری بھجوا دی گئی۔تفصیلات کے مطابق ویڈیو مسلم لیگ (ن)کی نائب صدر مریم نواز نے پریس کانفرنس میں دکھائی تھی۔ ذرائع ایف آئی اے کے مطابق تصویر اور آواز ایک ہی شخص کے ہونے یا نہ ہونے کی تصدیق کی جائیگی،یہ بھی دیکھا جائے گا کہ

آڈیو اور ویڈیو ایک ساتھ ریکارڈ ہوئی یا الگ الگ۔ذرائع نے بتایاکہ فورنزک کے دوران الیکٹرانک جعل سازی یا ایڈیٹنگ کی جانچ بھی کی جائیگی۔ذرائع کے مطابق مکمل فورنزک ٹیسٹ کیلئے ریکارڈنگ ڈیوائس کا موجود ہونا ضروری ہے۔ ذرائع نے بتایاکہ ایف آئی اے کو ابھی تک ویڈیو بنانے والی ڈیوایس نہ مل سکی، ڈیوائس نہ ملنے کے باعث ویڈیو کی جانچ پڑتال میں تاخیر کا خدشہ ہے۔ ذرائع کے مطابق ڈیوائس موجود ہو تو ویڈیو کا فرانزک ایک سے دو روزمیں مکمل ہو جاتی ہیں۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق احتساب عدالت نے نیب کی مریم نوزشریف کے خلاف درخواست ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے مسترد کر دی ہے تاہم دوسری جانب مریم نواز نے انکشاف کیاہے کہ ہم سے بات چیت کیلئے متعدد بار رابطہ کیا گیا لیکن نوازشریف اور میں اس کیلئے تیار نہیں ہوئے ۔تفصیلات کے مطابق مریم نواز کا کہنا تھا کہ میں اور میاں صاحب بات چیت کے لوازمات پورے نہیں کر سکتے،صحافی کی جانب سے سوال کیا گیا کہ وہ کون سے لوازمات ہیں جو آپ لوگ پورے نہیں کر سکتے جس پر مریم نواز نے کہا کہ بات چیت کے لیے اصولوں کی قربانی دینی پڑتی ہے جس کے لیے ہم تیار نہیں ہیں۔مریم نواز نے کہا کہ ڈیل دینے کی باتیں کرنے والے کو خود ڈیل کی ضرورت پڑ گئی ہے۔رہنما ن لیگ نے کہا کہ میں تو موجودہ حکومت کو 5 سال دینے کے لیے تیار ہوں لیکن عوام انہیں مدت مکمل نہیں کرنے دیں گے کیونکہ حکومت مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے۔نائب صدر مسلم لیگ نے کہا کہ آج راولپنڈی سے ہمارے 150 کارکنان کو حراست میں لیا گیا ہے، مسلم لیگ ن کے جتنے قائدین کو گرفتار کرنا ہے کر لیں لیکن ہم ڈرنے والے نہیں ہیں۔ایک سوال کے جواب میں مریم نواز نے کہا کہ اب کسی کی جرات نہیں کہ آمریت کی طرف دیکھے، آمر ناکام ہو چکا، آج وہ بیمار ہیں، اللہ انہیں صحت دے۔