’’ موٹر وے پر شاہد خاقان عباسی کی گاڑی سے ہیروئن ۔۔۔۔‘‘ غریدہ فاروقی نے ایسی بات کہہ دی کہ پورا ملک حیران رہ گیا

لاہور( مانیٹرنگ ڈیسک) نیب کی ٹیم کی جانب سے مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنماء اور سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو گرفتار کر لیا گیا ، شاہد خاقان عباسی کو لاہور ٹھوکر نیاز بیگ کے قریب سے موٹر وے سے اترتے ہوئے گرفتار کیا گیا ، تاہم شاہد خاقان عباسی کی گرفتاری پر

سینئر صحافی و اینکر پرسن غریدہ فاروقی نے ایسی بات کہہ دی ہیے کہ پورا ملک حیران رہ گیاا ہے۔ تفصیلات کے مطابق سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر پیغام چھوڑتے ہوئے گریدہ فاروقی کا کہنا ہے کہ ’’ لاہور ٹول پلازہ پر شاہد خاقان عباسی کی گاڑی سے ہیروئن ملی کہ نہیں ۔۔۔؟‘‘

ایک اور ٹویٹ میں غریدہ فاروقی کا کہنا تھا کہ ’’ ایل این جی سکینڈل میں فراڈ ہے گھپلہ ہے تو کم از کم گزشتہ ایک سال سے پی ٹی آئی کی حکومت ہے۔ پارلیمان میں یہ معاہدہ پیش کر کے عوام کو کیوں نہ دکھا دیا گیا کہ کتنے اربوں/کھربوں کا چُونا لگا۔۔؟ یا احتساب کے نام پر معصوم عوام کو چُونا لگایا جا رہا ہے۔۔؟‘‘

خیال رہے کہ آج مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنماء اور سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو نیب حکام نے گرفتار کر لیا ہے۔ نیب حکام کی جانب سے گرفتار ی ٹھوکر نیاز بیگ لاہور کے قریب موٹر وے انٹر چینج کے قریب عمل میں لائی گئی ، شاہد خاقان عباسی اسلام آباد سے لاہور آرہے تھے اور انہوں نے مسلم لیگ کے اجلاس جو کہ ماڈل ٹاؤن میں منعقد کیا جانا تھا ، میں شرکت کرنا تھی ۔ نیب حکام کی جانب سے شاہد خاقان عباسی کو کئی بار طلب کیا گیا لیکن شاہد خاقان عباسی عُذر پیش کرتے رہے، اور نہ خود نیب میں پیش ہوئے اور نہ ہی نیب کی جانب سے بھجوائے گئے سوالنامے کا جواب دیا۔ شاہد خاقان عباسی پر وزرات پٹرولیم میں غیر قانونی بھرتیوں کا الزام ہے، اس کے علاوہ شاہد خاقان عباسی کی جانب سے شیخ عمران الحق کو غیر قانونی طور پر ایم ڈی پی ایس او لگایا گیا ،، شیخ عمران الحق 50 لاکھ روپے ماہانہ تنخواہ لیتے رہے، اس سے قبل شاہد خاقان عباسی نیب کو ایل این جی اسکینڈل میں بھی مطلوب تھے اور کئی مرتبہ نیب کی جانب سے طلب کیے جاچکے ہتھے۔