شاہد خاقان عباسی کے بعد مفتاح اسماعیل کی بھی گرفتاری۔۔۔ خبر آتے ہی (ن) لیگ میں ہلچل مچ گئی

لاہور( مانیٹرنگ ڈیسک) آج نیب نے کارروائی کرتے ہوئے لاہور ٹھوکر نیاز بیگ سے مسلم لیگ ن کے اہم ترین رہنماء اور سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو گرفتار کر لیا ہے، تاہم اب نیب نے ایسا فیصلہ کر لیا ہے کہ مسلم لیگ (ن) میں ہلچل مچ گئی ہے اور تمام رہنماء چھپنا شروع

ہوگئے ہیں۔ اے آر وائی نیوز کے مطابق نیب حکام کی جانب سے سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل اور عمران ن الحق شیخ کو بھی گرفتار کر نے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ دونوں رہنماؤں کی گرفتاری کے پروانے پر چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے دستخط کر دیئے ہیں اور امکان ظاہر کیا جارہا ہے کہ بہت جلد ان کو بھی گرفتار کر لیا جائے ۔ خیال رہے کہ آج مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنماء اور سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو نیب حکام نے گرفتار کر لیا ہے۔ نیب حکام کی جانب سے گرفتار ی ٹھوکر نیاز بیگ لاہور کے قریب موٹر وے انٹر چینج کے قریب عمل میں لائی گئی ، شاہد خاقان عباسی اسلام آباد سے لاہور آرہے تھے اور انہوں نے مسلم لیگ کے اجلاس جو کہ ماڈل ٹاؤن میں منعقد کیا جانا تھا ، میں شرکت کرنا تھی ۔ نیب حکام کی جانب سے شاہد خاقان عباسی کو کئی بار طلب کیا گیا لیکن شاہد خاقان عباسی عُذر پیش کرتے رہے، اور نہ خود نیب میں پیش ہوئے اور نہ ہی نیب کی جانب سے بھجوائے گئے سوالنامے کا جواب دیا۔ شاہد خاقان عباسی پر وزرات پٹرولیم میں غیر قانونی بھرتیوں کا الزام ہے، اس کے علاوہ شاہد خاقان عباسی کی جانب سے شیخ عمران الحق کو غیر قانونی طور پر ایم ڈی پی ایس او لگایا گیا ،، شیخ عمران الحق 50 لاکھ روپے ماہانہ تنخواہ لیتے رہے، اس سے قبل شاہد خاقان عباسی نیب کو ایل این جی اسکینڈل میں بھی مطلوب تھے اور کئی مرتبہ نیب کی جانب سے طلب کیے جاچکے ہتھے۔