حیدر آباد: ٹرینوں کے ٹکرانے سے کتنے افراد جاں بحق ہوئے؟ شیخ رشید نے قوم کو حقیقت بتا دی

راولپنڈی (نیوز ڈیسک) وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے دو ٹرینوں کے تصادم میں کسی مسافر کے جاں بحق ہونے کی خبروں کی تردید کی ہے۔حیدر آباد میں جناح ایکسپریس اور مال بردار گاڑی کے حادثے کے حوالے سے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید احمد نے کسی مسافر کے جاں

بحق ہونے کی خبروں کی تردید کردی۔ انہوں نے کہا کہ کسی مسافر کے حادثے میں جاں بحق ہونے کی اطلاع نہیں ہے اور نہ ہی حادثے میں کسی مسافر کو نقصان پہنچا ہے۔ وفاقی وزیر ریلوے نے کہا کہ ٹرینوں کے تصادم میں ڈرائیور، اسسٹنٹ ڈرائیور اور گارڈ کے جاں بحق ہونے کی اطلاع ہے، حادثے کی تحقیقات کر رہے ہیں اور ایک گھنٹے میں ابتدائی رپورٹ سامنے آجائے گی۔خیال رہے کہ کراچی سے جانے والی جناح ایکسپریس حیدر آباد ریلوے سٹیشن کے قریب مکی شاہ تھانے کی حدود میں مال گاڑی سے ٹکراگئی جس کے نتیجے میں ٹرین کے انجن میں آگ لگ گئی جبکہ ٹرین کی 3 بوگیاں پٹری سے اتر گئیں۔ ریسکیو حکام کا کہنا ہے کہ دونوں ٹرینیں ایک ہی ٹریک پر ایک ہی طرف جارہی تھیں ۔کراچی سے لاہور جانے والی جناح ایکسپریس آگے تھی جسے مال بردار ٹرین نے پیچھے سے ٹکر ماری جس کے نتیجے میں جناح ایکسپریس کی تین بوگیاں ٹریک سے اتر گئیں۔ حادثے میں مسافر ٹرین کے ڈرائیور اور اسسٹنٹ ڈائریکٹر زخمی ہوئے ہیں جبکہ متعدد افراد کے بوگیوں کے نیچے دبے ہونے کا خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ مال گاڑی میں کوئلہ بھرا ہوا تھا ۔ حادثے کے بعد دونوں گاڑیوں کے انجن تباہ ہوگئے جبکہ مال گاڑی کا انجن پٹری سے اتر کر سڑک پر آگیا۔حادثے کی اطلاع ملتے ہی ریسکیو ٹیموں نے موقع پر پہنچ کر امدادی کارروائیاں شروع کردیں اور زخمیوں کو قریبی ہسپتال منتقل کردیا۔ ریلوے حکام نے ریلیف ٹرین بھی حیدر آباد کیلئے روانہ کردی ہے جبکہ کراچی جانے والی ٹرینوں کو راستے میں روک لیا گیا ہے۔