پاکستان میں نجی اسکولوں کی فیسیں کتنی ہونگی ؟ سپریم کورٹ نے اپنا تاریخی حکم سنا دیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) سپریم کورٹ نے نجی سکولز کے حق میں لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے حکم جاری کیا ہے کہ پرائیویٹ سکولز فیس میں سالانہ پانچ فیصد ہی اضافہ کر سکتے ہیں۔تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے بڑا فیصلہ کرتے ہوئے حکم دیا ہے کہ پرائیویٹ سکولز کی فیس میں سالانہ

5 فیصد سے زیادہ اضافہ نہیں ہوگا۔ نجی اسکولز کے حق میں لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دیدیا گیا۔اس کے علاوہ سندھ ہائی کورٹ فل بنچ کا فیصلہ برقرار رکھتے ہوئے فیسوں میں 20 فیصد کمی سمیت تمام عبوری حکم واپس لے لیے گئے۔ عدالت نے نجی سکولز کو فیس میں کمی سے لے کر آج تک کم شدہ فیس بطور بقایا جات لینے سے روک دیا۔عدالت عظمیٰ نے فیصلے میں کہا ہے کہ نجی سکولز اگر فیس میں 5 کے بجائے 6 سے 8 فیصد تک سالانہ اضافے کریں گے تو انہیں اس کیلئے جواز پیش کرنا ہوگا۔مختصر فیصلہ جسٹس اعجاز الاحسن نے پڑھ کر سنایا۔ جسٹس فیصل عرب نے فیسوں میں 5 فیصد اضافے کی حد مقرر کرنے سے اختلاف کیا۔ تفصیلی فیصلہ بعد میں جاری کیا جائے گا۔ دوسری جانب یہ بھی خبر ہے کہ خصوصی عدالت نے سنگین غداری کیس میں سابق صدر پرویز مشرف کا دفاع کا حق ختم کردیا۔سابق صدر پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس کی سماعت خصوصی عدالت ہوئی میں جہاں سابق صدر کے وکیل نے بتایا کہ پرویز مشرف زندگی کی جنگ لڑرہے ہیں، وہ ذہنی اور جسمانی طورپر اس قابل نہیں کہ ملک واپس آسکیں، سابق صدر کا وزن تیزی سے کم ہو رہا ہے، وہ وہیل چئیر پر ہیں اور پیدل بھی نہیں چل سکتے۔پرویز مشرف کے وکیل نے ان کے عدالت میں پیش ہونے کے لیے ایک اور موقع دینے کی استدعا کرتے ہوئے کہا کہ سابق صدر کے دل کی کیموتھراپی کے بعد صحت مزید خراب ہوتی ہے، اور اب یہ خبر آئی ہے۔