رسی جل گئی پربل نہ گیا: جیل میں دوسری رات گزارتے ہی آصف زرداری کی طبیعت بگڑگئی ۔۔ سابق صدر نے شاہانہ سہولیات بھی مانگ لیں

اسلام آباد(ویب ڈیسک) سابق صدر آصف زرداری نے قومی احتساب بیورو(نیب )سے 2اٹینڈنٹس مانگ لئے۔آصف علی زرداری کے وکیل لطیف کھوسہ کی جانب سے ڈی جی نیب راولپنڈی کو لکھے گے خط میں کہا گیا ہے کہ وہ مختلف بیماریوں میں مبتلا ہیں،دن رات اٹینڈنٹ کی ضرورت ہوتی ہے۔ ایک اٹینڈنٹ دن

اور دوسرا رات کو صحت کی نگرانی اور ادویات دیتا ہے،دوران حراست مجھے 2اٹینڈنٹ کی سہولت فراہم کی جائے۔خط میں کہا گیا ہے کہ نہال چند اور لیاقت علی کو میرے ساتھ رہنے کی اجازت دی جائے،اگراٹینڈنٹس کی سہولت نہ دی گئی تومیری زندگی کوخطرہ ہوسکتا ہے، دوسری جانب یہ بھی خبر ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے گزشتہ 10 سال کی کرپشن کا پتہ لگانے کے لیے اپنی سربراہی میں اعلیٰ اختیاراتی انکوائری کمیشن بنانے کا اعلان کیا ہے۔قوم سے خطاب میں وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ اب تک ان پر ملک کو بحران سے نکالنے کا دباؤ تھا لیکن اب وہ ملک کو تباہی کے دہانے پر پہنچانے والوں کو نہیں چھوڑیں گے، انہوں نے کہا کہ پرویز مشرف کے 8 سال کے دور میں 2 ارب ڈالرز کا غیرملکی قرضہ بڑھا لیکن آصف زرداری اور نواز شریف کے ادوار میں بیرونی قرضہ 41 ارب سے97 ارب ڈالر ہوگیا جب کہ ان دس سالوں میں ملکی قرضہ چھ ہزار ارب روپے سے 30 ہزار ارب روپے ہوا۔عمران خان نے کہا کہ انکوائری کمیشن کے ذریعے ان 10 سالوں میں لیے گئے قرضے کی تحقیقات کی جائے گی جس میں انٹیلی جنس بیورو (آئی بی)، وفاقی تحقیقاتی ادارہ (ایف آئی اے)، فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر)، سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) اور انٹیلیجنس ادارے آئی ایس آئی کے نمائندے شامل ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ انکوائری کمیشن کے ذریعے پتا لگائیں گے، یہ 24 ہزار ارب روپے کا قرضہ کیسے چڑھا۔