بریکنگ نیوز:اللہ تعالیٰ نے پاک فوج کی لاج رکھ لی۔۔۔۔گوادر پی سی ہوٹل میں دہشت گردوں کے ساتھ مقابلہ کا نتیجہ کیا نکلا؟پورے ملک میں اللہ اکبر اور پاک فوج زندہ باد کے نعرے

گوادر (ویب ڈیسک ) سکیورٹی فورسز نے گوادر میں پی سی ہوٹل پر حملہ کرنے والے تمام دہشتگردوں کو ہلاک کردیا۔ گزشتہ روز عصر کے بعد تین دہشتگردوں نے گوادر میں قائم پی سی ہوٹل پر حملہ کیا تھا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق تین دہشتگردوں نے ہوٹل میں داخل ہونے کی

کوشش کی تو انٹری پر موجود سکیورٹی گارڈز نے انہیں للکارا جس پر انہوں نے فائرنگ کردی ۔ دہشتگردی کی فائرنگ سے ایک سکیورٹی گارڈ موقع پر شہید ہوگیا۔ سکیورٹی فورسز نے حملے کی اطلاع ملتے ہی فوری کارروائی کی اور ہوٹل میں موجود تمام مہمانوں کو بحفاظت باہر نکال لیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق پی سی ہوٹل کے اندر 40 چینی اور 30 پاکستانی شہری موجود تھے جنہیں سکیورٹی فورسز نے باہر نکال لیا تھا جس کے بعد کلیئرنس آپریشن شروع کردیا گیا تھا۔ آئی ایس پی آر کی جانب سے بیان میں کہا گیا تھا کہ دہشتگردوں کو بالائی منزل پر جانے والی سیڑھیوں پر محصور کرلیا گیا ہے تاہم اب تازہ پیشرفت یہ سامنے آئی ہے کہ تمام حملہ آوروں کو مار دیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق گوادر پی سی ہوٹل پر دہشت گرد حملہ ناکام ہوگیا۔ تمام دہشت گرد جہنم واصل کر دیے گئے۔ تین گھنٹے طویل آپریشن کے بعد سیکورٹی فورسز نے تمام 4 دہشت گرد جہنم واصل کر دیے۔ پی سی ہوٹل کی عمارت کو کلیئر قرار دے دیا گیا، کسی غیر ملکی کو نقصان نہیں پہنچا۔ تفصیلات کے مطابق پاک فوج اور دیگر سیکورٹی فورسز نے گوادر پی سی ہوٹل پر دہشت گرد حملہ ناکام بنا دیا ہے۔ پاک فوج اور دیگر سیکورٹی فورسز نے گوادر پی سی ہوٹل پر دہشت گرد حملے کے بعد تین گھنٹے طویل آپریشن کیا۔ اس آپریشن کے دوران سیکورٹی فورسز نے تمام 4 دہشت گرد جہنم واصل کر دیے۔ آپریشن کے بعد پی سی ہوٹل کی عمارت کو کلیئر قرار دے دیا گیا۔

کسی غیر ملکی کو نقصان نہیں پہنچا۔ دوسری جانب کالعدم بی ایل اے نے پی سی ہوٹل گوادر پر حملے کی ذمے داری قبول کر لی ہے۔کالعدم بی ایل اے نے موقف اختیار کیا ہے کہ حملے کا مقصد ہوٹل میں قیام کرنے والے چینی اور دیگر غیر ملکیوں کو نشانہ بنانا تھا۔ تاہم سیکورٹی فورسز نے بی ایل اے کا حملہ ناکام بنا دیا۔ اس حوالے سے آئی ایس پی آر کے مطابق گوادر کے حالات سکیورٹی فورسز کے کنٹرول میں ہیں۔فورسز نے دہشتگردوں کو گھیرے میں لے رکھا ہے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ نے بتایا کہ پی سی ہوٹل کی انٹری پر موجود گارڈ نے دہشتگردوں کو روکا ۔ دہشتگردوں نے فائرنگ کردی۔ فائرنگ سے پی سی ہوٹل کا سکیورٹی گارڈ شہید ہوگیا ۔ سکیورٹی فورسز دہشتگردوں کو گھیرے میں لے کر ہوٹل کی بالائی منزل تک لے گئے۔اسی دوارن پی سی ہوٹل میں موجود تمام مہمانوں کو بحفاظت باہر نکال لیا گیا ۔ اس سے قبل وزیرداخلہ بلوچستان ضیاء اللہ لانگو نے کہا ہے کہ ہوٹل میں کچھ افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں، ہوٹل میں موجود تمام لوگوں کو بحفاظت باہر نکال لیا گیا، کوئی غیرملکی موجود نہیں ہے، ہوٹل انتظامیہ اور سکیورٹی فورسز سے رابطے میں ہیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پی سی ہوٹل گوادر میں 40چینی باشندے موجود ہیں جبکہ 30پاکستانی بھی موجود ہیں۔ وزیراطلاعات بلوچستان کا کہنا ہے کہ گوادر میں پی سی ہوٹل میں فورسز اور دہشتگردوں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ جاری ہے۔ سکیورٹی فورسز کی مزید نفری طلب کرلی گئی ہے۔