بریکنگ نیوز: مودی سرکار کو کمرتوڑ جھٹکا۔!!! روس نے بھارت کی مدد کرنے سے انکار کردیا

کراچی (ویب ڈیسک) بھارت اور چین کے درمیان سرحدی کشیدگی کے معاملے پر امریکا کے بعد روس نے ہاتھ اٹھالیا، بھارت کا ساتھ دینے سے صاف انکار، روسی وزیرخارجہ سرگئی لاوروف نے روس کے دورے پر آئے ہوئے اپنے بھارتی ہم منصب سے ملاقات میں کہا کہ ماسکو کا خیال ہے کہ

چین اور بھارت کے درمیان ثالثی کی ضرورت نہیں ہے۔ لاوروف کا کہنا تھا کہ میں سمجھتا ہوں کہ چین یا بھارت دونوں میں سے کسی کو مدد کی ضرورت نہیں ہے۔ روس دونوں ممالک کو اسلحہ سپلائی کرنے والے بڑے ممالک میں شامل ہے۔ بھارتی اخبار ٹائمز آف انڈیا نے رپورٹ دی تھی کہ دورہ روس کے موقع پر بھارتی وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ روس سے ایس 400 دفاعی میزائل نظام کی فراہمی کا عمل جلد مکمل کرنے کا مطالبہ کرے گا جبکہ اس کیساتھ ساتھ لڑاکا طیاروں، ٹینکوں اور آبدوزوں کی جلد فراہمی کا مطالبہ بھی کیا جائیگا۔ بھارت کو امید تھی کہ اسلحہ فراہمی کے معاہدوں کے باعث روس بیجنگ سے سرحدی کشیدگی میں نئی دہلی کی حمایت کرے گا تاہم ماسکو حکومت نے واضح طور پر بھارت کی مدد کرنے سے انکار کردیا ہے۔ دوسری جانب وزیر خارجہ ایس جے شنکر اپنے چینی اور روسی ہم منصب کے ساتھ آج روس-بھارت اور چین کی ورچول کانفرنس میں شامل ہوں گے۔ Galwanوادی میں بھارت اور چین کے بیچ تنازع کے پس منظر میں یہ میٹنگ ہورہی ہے۔ وزارت خارجہ کے ترجمان انوراگ سری واستو نے کہا کہ میٹنگ میں کورونا وائرس وبا اور عالمی سلامتی واقتصادی استحکام جیسے معاملات پر تبادلہ خیال کیاجائے گا۔