اپنا منہ بند رکھو۔۔!! ہیوسٹن کے پولیس چیف نے ڈونلڈ ٹرمپ کو دھمکی دے ڈالی، پولیس کا مظاہرین کو گرفتار کرنے سے انکار

واشنگٹن (نیوز ڈیسک ) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اتوار کی شب ریاستی گورنرز پر زور دیا کہ وہ تشدد اور تخریب کاری کے مرتکب عناصر سے سختی سے نمٹیں۔

اسی سلسلے میں ہیوسٹن کے پولیس چیف آرٹ آسیویڈو نے ڈونلڈ ٹرمپ سے کہا ہے کہ وہ خاموش رہیں ، اور لوگوں کی زندگیاں خطرے میں نہ ڈالیں۔

ایک انٹرویو کے دوران آرٹ آسیویڈو نے کہا کہ اس ملک کے پولیس سربراہوں کی طرف سے میں امریکا کے صدر سے ایک ہی بات کہوں گا کہ براہ کرم اگر آپ کے پاس کہنے کے لیے کچھ تعمیری نہیں ہے تو اپنا منہ بند رکھیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ یہ دل و دماغ جیتنے سے متعلق ہے۔انہوں نے ٹرمپ سے نوجوانوں کی زندگیاں خطرے میں نہ ڈالنے کی بھی درخواست کی۔

۔خیال رہے کہ مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹرپر پوسٹ کردہ متعدد ٹویٹس میں امریکی صدر نے ملک کے مختلف علاقوں میں ہونے والے پرتشدد اور خونی مظاہروں کی روک تھام کے لیے نیشنل گارڈ کو طلب کرنے کے ساتھ ساتھ مقامی حکومتوں پر زور دیا کہ وہ انتشار پسندوں کے ساتھ کوئی رعایت نہ برتیں۔

صدر ٹرمپ نے کہا کہ تخریب کاروں کو گرفتار کرکے جیلوں میں ڈالا جائے۔ ان کا کہنا تھا کہ جو کچھ تخریب کار اور انتشار پسند عناصر کرنا چاہتے ہیں امریکا ایسا ہرگز نہیں چاہتا۔

امریکی صدر نے زور دے کر کہا کہ ریاستی حدود عبور کرنے والوں کے خلاف لامحدود فوجی طاقت اور گرفتاریوں کی ضرورت ہے۔انہوں نے نوٹ کیا کہ نیشنل گارڈ نے منیاپولیس غنڈوں کو گرفتار کیا۔

گرفتار ہونے والوں میں ریاست سے باہر سے آنے والے عناصر شامل تھے۔ٹرمپ نے کہا کہ اب فلاڈیلفیا میں امن و امان کی حالت بہتر ہے۔ تخریب کاروں نے فلاڈیلفیا میں دکانوں میں لوٹ مار کی۔ ان کی روک تھام کے لیے نیشنل گارڈز کو آنا چاہیے۔