عوام مشتعل۔۔!! پولیس اور نمازیوں کے درمیان تصادم۔۔۔ اجتماع کرنے سے روکنے پرافراد کا خاتون ایس ایچ او پر حملہ، افسوسناک خبرآگئی

کراچی(ویب ڈیسک) کورونا لاک ڈاون کے باعث جمعہ کے اجتماع کرنے سے روکنے پر کراچی کے علاقے پیرآباد میں مشتعل عوام نے پولیس پر حملہ کر کے خاتون ایس ایچ او کو زخمی کردیا۔حکام کے مطابق پولیس اور نمازیوں کے درمیان تصادم جامع مسجد اورنگی ٹاون فرنٹیئر کالونی میں ہوا۔ مشتعل افراد نے پولیس پارٹی

پر تشدد کیا جس میں خاتون ایس ایچ او شرافت خان زخمی ہوگئیں۔ خاتون ایس ایچ او سندھ حکومت کی پابندی پر عملدرآمد کروا رہی تھی۔خیال رہے کہ کورونا وائرس کے پیش نظر حکومت سندھ نے نماز جمعہ کے اجتماعات پر پابندی لگادی ہے۔دریں اثناءسول اینڈ جوڈیشل مجسٹریٹ آصف علی عباسی نے ایس ایچ او پر حملے کا نوٹس لیتے ہوئے واقع کی فوری رپورٹ طلب کرلی ہے۔ سول اینڈ جوڈیشل میجسٹریٹ نے ڈی آئی جی ویسٹ سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔واقع کے بعد ایس پی اورنگی ٹاون ودیگر افسران تھانہ پیر آباد پہنچ گئے اور وہ کشیدہ صورتحال کا جائزہ لے رہے ہیں۔پولیس حکام کا کہنا ہے کہ اطراف کی گلیوں کو مکمل طور پر سیل کردیا گیا۔ خاتون پولیس افسر پر حملے میں ملوث افراد کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جارہے ہیں۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق دنیا بھر میں رمضان المبارک کے آغاز میں کم ہی وقت رہ گیا ہے۔ رمضان المبارک دنیا بھر کے مسلمانوں کیلئے سب سے مقدس ترین مہینہ ہے اور اہل ایمان ہر سال اس ماہ کی آمد کا بے صبری سے انتظار کرتے ہیں۔ رمضان کے بعد مسلمانوں میں عید الفطر منانے کا تجسس برقرار رہتا ہے جس کی وجہ سے رمضان کے آخری چند ایام میں عید کے چاند کو لے کر بحث جاری رہتی ہے۔ ایکسپریس نیوز کے مطابق پاکستان کے معروف سائنسدان اور جامعہ کراچی انسٹی ٹیوٹ آف سپیس اینڈپلانیٹری ایسٹرو فزکس کے سابق ڈائریکٹر پروفیسر ڈاکٹر شاہد قریشی نے بتایا ہےکہ ا س سال عید کا چاند بغیر دوربین کے نہیں دیکھا جا سکتا۔ ان کا کہنا تھا کہ مئی کو بغیر دور بین (ٹیلی اسکوپ) کےچاند نظر آنے کے امکانات موجود نہیں تاہم گوادر اور پسنی سے اس روز دور بین کے ذریعے شوال (عید الفطر ) کے چاند کی رویت کے انتہائی معمولی امکانات ہیں۔