عمران خان کی غرورسے لبریز غلطی تاریخ کبھی نہیں بھلائے گی۔۔۔!!سینئر صحافی کامران خان نے وزیراعظم کو الٹی میٹم دے دیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) گزشتہ روز کورونا وائرس کے معاملے پر آل پارٹیز کانفرنس ہوئی جس سے خطاب کے بعد وزیراعظم عمران خان سائن آﺅٹ ہوگئے جس کے بعد قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہبازشریف اور بلاول نے بھی واک آﺅٹ کردیا جبکہ وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کی واپسی کی اپیل بھی کسی کام نہ آئی ،

ایسے میں سینئر صحافی کامران خان نے کہاکہ ”شدید افسوس ہوا کل عمران خان نے قوی اتحاد کا نادر موقع گنوا دیا جب سپیکر قومی اسمبلی کی دعوت پر کل جماعتی کانفرنس میں اپنی تقریر کر کے نکل گئے شہباز شریف بلاول بھٹو منہ دیکھتے رہ گئے تاریخ عمران خان کی غرور سے لبریز اس غلطی کو کبھی نہیں بھولے گی“پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کامران خان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان لاک ڈائون کی صورتحال سے دوچار ہے، کورونا کیسز کی تعداد ایک ہزار سے زائد ہوچکی ہے اور پچھلے دس دنوں میں مریضوں میں پچانوے فیصد اضافہ ہوا، اس تشویشناک صورتحال میں قومی اتحاد کا نادر موقع بالآخر ضائع ہوگیا اور بنیادی ذمہ داری عمران خان پر رہی، وزیراعظم بھی اجلاس میں آگئے ، جے یو آئی ، اے این پی ، شہبازشریف اور بلاول بھی موجود تھے، انہوں نے کسی کا شکریہ ادا کیے بغیر اپنی بات کی اور چلے گئے، اس موقع پر شہبازشریف نے اسد قیصر سے پوچھا تو نفی جواب ملنے پر شہباز نے کہاکہ اگر یہ سنجیدگی ہے تو اس میٹنگ میں نہیں بیٹھتے، ہم یہاں سیاست کرنے نہیں ، مشاورت اور بات کرنے آئے تھے کہ کس طرح اپنی توانائیاں یکجا کریں، بد دل ہوکر شہبازشریف اٹھ کر چلے گئے اور قوم کیلئے افسوسناک ماحول پیدا ہوگیا۔یکجہتی کی داغ بیل ڈالنے والے بلاول نے بھی واک آئوٹ کیا اور ناخوشگواری کا اظہار بھی کیا، ہم اب بھی وزیراعظم سے اپیل کرتے ہیں کہ ںظرثانی کریں، ہم سب کو مل کر اس کرائسزکا مقابلہ کرنا ہے ، وفاق کو لیڈ کرنا آپ کی ذمہ داری ہے ۔ کامران خان کاکہناتھاکہ شہبازشریف بھی لندن سے تشریف لائے تھے لیکن عمران خان نے اتحاد کا یہ نادر موقع گنوادیا ہے ، ایک شاندار گڈ ول کو ضائع کردیا گیا۔