ریلیف پیکیج !! بجلی و گیس کے بِل کی اقساط کونسے صارفین پر لاگو ہوگی؟ وفاقی وزیر عمرایوب نے عوام کو حیران کن سرپرائز دیدیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب نے کہا ہے کہ بجلی کے بل 3 اقساط میں دینے ہوں گے، بل کی اقساط 300 یونٹ استعمال کرنے والے صارفین پر ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق وزیر توانائی عمر ایوب نے پروگرام ’پاور پلے‘ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 2 ہزار روپے تک گیس استعمال کرنے والے صارفین تین اقساط میں بل ادا کریں گے، مارچ، اپریل، مئی کے گیس بلز کی ادائیگی 9 ماہ میں کرنا ہوگی۔
انہوں نے کہا کہ مارچ کے گیس بل کی ادائیگی تین ماہ میں کرنا ہوگی، اسی طرح اپریل، مئی کے بلز تین، تین ماہ میں ادا کرنا ہوں گے، جون کے بعد نئے آنے والے بل کی صورتحال دیکھی جائے گی۔

عمر ایوب نے کہا کہ وزیراعظم ریلیف پر خصوصی توجہ دے رہے ہیں، حکومت اقدامات اٹھا رہی ہے انشا اللہ مسائل نہیں ہوں گے، ریلیف پیکیج دینے پر ہماری معاشی ٹیم کو کریڈٹ جاتا ہے، توقعات سے ہٹ کر صورتحال پیدا ہوئی ہے، ہم نے معیشت بھی چلانی ہے، آئی ایم ایف، ورلڈ بینک سے بھی کہا ہمارے لیے عوام پہلے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ملک کی بہتری کے لیے جو کرسکتے ہیں کریں گے، ملکی مفاد سب سے پہلے ہے، کوشش کریں گے قیمتوں میں استحکام آئے۔

وزیر توانائی نے کہا کہ سابقہ حکومت نے ایل این جی کنٹریکٹ مہنگے داموں کیے تھے، پاکستان کو آج بھی ان معاہدوں کی وجہ سے ایک ارب کی بٹ پڑ رہی ہے، سابقہ حکومت نے مہنگی گیس خرید کر سستے داموں فروخت کیا، ن لیگ گیس سیکٹر میں 250 ارب گردشی قرض چھوڑ کر گئی، گیس چوری والے علاقوں میں میٹر لگارہے ہیں، سپلائی دے رہے ہیں۔

عمر ایوب کا کہنا تھا کہ گیس سیکٹر میں ماہانہ 39 ارب ماہانہ خسارہ ہورہا تھا جسے 16 ارب پر لائے ہیں، گیس سیکٹر میں کسی نے اتنے گردشی قرض کا سوچا بھی نہیں ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں 20 فیصد فیڈرز رہ گئے جہاں بجلی کی چوری ہوتی ہے، بجلی چوری کی روک تھام کے لیے اقدامات اٹھا رہے ہیں، 20 فیصد فیڈرز پر لوڈ شیڈنگ ہے اسے بھی جلد ختم کردیا جائے گا۔