مجھے کورونا وائرس اس شخص سے منتقل ہوا جس نے۔۔۔۔کورونا وائرس ٹیسٹ مثبت آتے ہی سعید غنی نے وائرس ٹرانسمنٹ کرنے والے شخص کو اہم پیغام دے دیا

کراچی ( ویب ڈیسک ) سندھ کے وزیر تعلیم سعید غنی نے گھر میں اس لیے بیٹھا ہوں کہ مجھ سے کسی اور کو وائرس منتقل نہ ہو ،جتنا لوگ کم باہر نکلیں گے اتنا وائرس کا پھیلاوں رکے گا ۔نجی نیوز چینل جیو نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا

کہ جب سے وباءکے پھیلنے کا خدشہ پیدا ہوا ہے تب سے حلقے میں بھی بہت کم گیا ہوں اور غیر ضروری ملاقاتوں سے بھی گریز کیا صرف کورونا کی آگہی پھیلانے سے متعلق ملاقاتیں کیں اور لوگوں سے ملا ۔سعید غنی نے کہا کہ مجھے وائرس اس شخص سے منتقل ہوا جس سے میں ملا ہوں ،جس شخص سے مجھے وائرس لگا ہے ،وہ اپنے اور اہل خانہ کے لیے احتیاط برتیں ۔انہوں نے کہا کہ آئسو لیشن میں رہ کر جو کام کر سکتا ہوں ،کر رہا ہوں ،آج ایک اور ٹیسٹ کرایا ہے جس کی رپورٹ آنا ابھی باقی ہے ۔وزیر تعلیم سندھ نے کہا کہ ٹیسٹ اس لیے کرایا کہ کام کی نوعیت کی وجہ سے احتیاط نہیں کر پا رہا تھا ۔ان کا کہنا تھا کہ اگر احتیاطی اقدامات نہ کیے تو زیادہ مشکلات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے ۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق کورونا وائرس سے ہزاروں افراد کی ہلاکتوں کے باوجود اٹلی سے خوش کن خبر۔ دنیا بھر میں عام تاثر ہے کہ کورونا وائرس سے زیادہ تر بوڑھے شہری لقمہ اجل بن رہے ہیں، مگر اٹلی کی 95 سالہ خاتون نے مکمل صحت یاب ہو کر سب کو حیران کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق جہاں اٹلی میں ہزاروں افراد مہلک کورونا وائرس کا شکار ہو کر زندگی کی بازی ہار گئے ہیں وہاں سے ایک انتہائی حوصلہ افزا خبر بھی سامنے آئی ہے۔کورونا وائرس سے متاثرہ ممالک کے تجربات سے یہ بات ثابت ہو چکی ہے کہ اس وائرس سے ہلاک ہونے والے افراد میں سے اکثریت بوڑھے افراد کی ہے۔ ڈاکٹرز کے مطابق بوڑھے افراد پر وائرس کا حملہ ہو تو بچنے کہ مواقع بہت کم ہوتے ہیں جس کے باعث تمام ممالک اپنے بوڑھے شہریوں پر خصوصی توجہ مرکوز کیے ہوئے ہیں اور ان کو زیادہ احتیاطی تدابیر میں رکھنے کے باعث ان میں خوف و ہراس کا عنصر بچوں اور نوجوانوں کی نسبت زیادہ ہے۔