گوجرانوالہ: بیٹے کے ہاتھوں معروف (ن) لیگی رہنما کا قتل ، پس پردہ کہانی کیا نکلی ؟

گوجرانوالہ (ویب ڈیسک) عابد سند ھو گھرمیں مردہ حالت میں پائے گئے ، اطلاع پر پولیس افسر موقع پر پہنچ گئے ، جائے وقوعہ سے شواہد جمع کر کے تحقیقات شک پر مقتول کے بیٹے ولید کو حراست میں لیا گیا تو ملزم نے دوست معید کیساتھ ملکر والد کو سرمیں گولیاں مارنے کا اعتراف کر لیا۔

مصدقہ ذرائع کے مطابق سگریٹ پینے سے منع کرنے پر ن لیگی رہنما عابد سندھو اپنے ہی بیٹے کے ہاتھوں ماراگیا ،تین روز قبل عابد سندھو نے بیٹے ولید اور اس کے دوست کو سگریٹ پینے پر ڈانٹا تھا ، پولیس نے دونوں کو گرفتار کر لیا ، ملزم ولید ایل ایل بی پارٹ ون کا طالبعلم اور مقتول کا اکلوتا بیٹا ہے ۔ بتایا گیا ہے کہ مسلم لیگ ن گوجرانوالہ کے رہنما عابد سندھو گزشتہ روزاپنے گھر واقع ماڈل ٹاؤن میں مردہ حالت میں پائے گئے ،واقعہ کی اطلاع پر سی پی او گوہر مشتاق بھٹہ، ایس ایس پی آپریشن علی وسیم،ایس ایس پی انوسٹی گیشن بلال افتخار اور دیگر پولیس افسر موقع پر پہنچ گئے اور جائے وقوعہ سے شواہد جمع کر کے تحقیقات شروع کر دیں ، پولیس نے شک گزرنے پر مقتول عابد سندھو کے بیٹے ولید کو حراست میں لے کر تفتیش کی تو اس نے انکشاف کیا کہ چند روز قبل اس کے والد نے اسے اور دوست معید کو سگریٹ پینے پر ڈانٹا تھا جس سے دلبرداشتہ ہو کر اس نے اپنے دوست معید کے ساتھ مل کر والد کو سوتے ہوئے سر میں گولیاں مار کر قتل کر دیا ، عابد سندھو پی پی 56 سے ن لیگ کے کوآرڈینیٹر تھے اورگوجرانوالہ میں کیبل نیٹ ورک بھی چلاتے تھے ۔ اطلاع پر پولیس افسر موقع پر پہنچ گئے ، جائے وقوعہ سے شواہد جمع کر کے تحقیقات شک پر مقتول کے بیٹے ولید کو حراست میں لیا گیا تو ملزم نے دوست معید کیساتھ ملکر والد کو سرمیں گولیاں مارنے کا اعتراف کر لیا۔