طیاروں میں ناقص میٹریل کس کے کہنے پر استعمال کیا گیا ، گھناونا عمل کھل کر سامنے آ گیا ، کمپنی کے خلاف ایکشن

نیویارک (ویب ڈیسک ) “بوئنگ 737 میکس کسی مسخرے نے ایجاد کیا ہے اور بندروں نے اسے بنایا ہے”جان بوجھ کرناقص طیارے بنانے پربوئنگ کمپنی کو بھاری جرمانہ کردیا گیا۔ یونائٹڈ سٹیٹ آف ریگولیٹرز نے کہا ہے کہ جان بوجھ بوئنگ طیاروں میکس 737 کے حصوں کو ناقص تیار کرنے پر 5.4 ملین ڈالر کا جرمانہ کیا جائے گا۔ جرمانہ فیڈرل ایوی ایشن ایڈمنسٹریشن کی جانب سے کیا گیا ۔

فیڈرل ایوی ایشن ایڈمنسٹریشن جانب سے کہا گیا ہے کہ طیاروں کے پرزے ٹیسٹ کرنے پر ناقص نکلے ہیں ۔ بوئنگ طیارے 737 کو ڈیزائن دینے والی کمپنی سے اس وقت جانچ پڑتال کی گئی جب میکس 737 طیارہ کریش ہو جانے سے 346 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ تاہم بوئنگ کمپنی کی جانب سے فلحال کوئی جواب نہ دیاگیا۔واضح رہے بوئنگ کمپنی کو بہت سے کیسزمیں مشکلات کا سامنا ہے اس سے قبل انڈونیشیا اور ایتھوپیاکے دو طیارے گر کر تباہ ہو گئے تھے۔واضح رہے امریکی طیارہ ساز کمپنی بوئنگ نے غیر یقینی صورتحال کے باعث 737 میکس طرز کے مسافر طیاروں کی تیاری عارضی طور پر روک دی تھی۔ بوئنگ کمپنی نے پیر کو اپنے ایک بیان میں 737 میکس طیاروں کی پروڈکشن روکنے کے فیصلے سے آگاہ کیا، یہ فیصلہ غیر یقینی صورتحال کے باعث کیا گیا کہ ایسے طیاروں کو بین الاقوامی سطح پر تجارتی پروازوں کی دوبارہ اجازت کب ملے گی رواں سال جنوری میں 737 میکس طیاروں کے دو حادثات میں 346 افراد ہلاک ہوگئے تھے، جس کے بعد سے ان طیاروں کے استعمال پر پابندی عائد کردی گئی تھی، حادثے کی شکار ہونیوالے ایئر لائنز کی جانب سے آئندہ سال اپریل تک ان طیاروں کے دوبارہ استعمال کا امکان نہیں ہے۔بوئنگ کی طرف سے بتایا گیا کہ 737 میکس طیاروں کی تیاری روکنے کا یہ اقدام مالی نقصانات میں مزید اضافے سے بچنے کیلئے کیا گیا ہے۔