نشاندہی پر گرفتار

اسلام آباد (ویب ڈیسک) دولت کے گھمنڈ میں چوردرندے نے نوکری کے بہانے یتم لڑکی کی عزت تار تار کر دی۔ ملزم پیپلز پارٹی کا سینئر راہنما اور سابق صوبائی امیدوار بھی ہے ۔ پولیس نے متاثرہ خاتون کی درخواست پر مقدمہ درج کر کے گرفتار کر لیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق جھنگی سیداں اسلام آباد کی رہائشی خاتون صائمہ پروین دختر اقبال نے بیان دیا کہ اس کا والد فوت ہو چکا ہے اور وہ اپنے ماموں کے گھر مقیم ہے ۔ کچھ ہفتے قبل سائلہ کی ملاقات حنا کنول نامی لڑکی سے ہوئی جس نے مجھے بتایا کہ وہ ایک این جی او میں کام کرتی ہے اور غریب و نادار یتیم لڑکیوں کی مدد کرتی ہے ۔میں نے اس سے اپنی نوکری کے بارے میں بات کی تو اس نے مجھے نوکری دلوانے کا وعدہ کیا اور اس طرح اس کا میرے گھر آنا جانا شرع ہو گیا ۔ میرے پاس موبائل فون نہ ہونے کی وجہ سے حنا کو میرے گھر آنا پڑتا تھا ۔ 3/8/2020کو حنا میرے پاس آئی اور ایک سم مجھے دی اور کہا کہ میرے ایک جاننے والے ناصر عبا س خان ہیں وہ تمہیں نوکری پر رکھ لیں گے۔ 9سمتبر کو مجھے کال موصول ہوئی ۔ حنا نے کہا کہ کراچی کمپنی ٹیوٹا سٹاپ پر آجائو تمہاری نوکری ہو گئی ہے ۔ میں مقررہ وقت پر وہاں پہنچی تو کچھ ہی دیر بعد ناصر خان سیاہ رنگ کی گاڑی میں وہاں پہنچ گیا اور ہم دونوں کو گاڑی میں بٹھا کر نامعلوم مقام پر لے گیا وہاں ایک شخص پہلے سے موجود تھا جسے میں نہیں جانتی اس دوران کمرے میں حنا کے سامنے ہی ناصر خان مجھ سے چھیڑ چھاڑ کرنے لگا میں نےشور مچایا تو نامعلوم شخص کمرے کے اندر آگیا۔ اس کے پاس ہتھیار تھا ۔ اس نے تان کر مجھے کہا کہ چپ چاپ صاحب کی بات مان لو ورنہ جان لے لوں گا گا ۔ اس کے بعد حناکنول اور نامعلوم شخص باہر نکل گئے اور میرے ساتھ مذکورہ ملزم نے غیر اخلاقی حرکت کی۔ پولیس تھانہ کراچی کمپنی نے ملزم کے خلاف مقدمہ درج کر کے گرفتار کر لیا ہے ۔ ملزم کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ ملزم ناصر عباس خان آف بنگو پیپلز پارٹی کا سینئر راہنما اور راولپنڈی پیپلز پارٹی کا ڈویژنل نائب صدر ہے اور اٹک سے صوبائی اسمبلی کیلئے امیدوار بھی تھا ۔